نیویارک ٹائمز ٹویٹرکوتصدیق شدہ چیک مارک کے لیے ماہانہ فیس ادا نہیں کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

نیویارک ٹائمز کےترجمان نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر تصدیق شدہ بیج ختم ہونے کے چندگھنٹے کے بعد کہا ہے کہ اخبار ٹویٹرپرتصدیق شدہ چیک مارک اسٹیٹس حاصل کرنے کے لیے ماہانہ فیس ادا نہیں کرے گا۔

ٹویٹر کی نئی پالیسی کے مطابق تصدیق شدہ چیک مارکس اب صرف مقررہ رقم کی ادائی پرحاصل کیے جاسکتے ہیں۔گولڈ چیک مارکس حاصل کرنے کے لیے اداروں کو ماہانہ ایک ہزارڈالرادا کرناہوں گے جبکہ امریکا میں 7 ڈالر کی ابتدائی قیمت پرنیلے رنگ کا چیک حاصل کیا جاسکتا ہے۔

ترجمان نے مزید کہاکہ ’’ہم ٹویٹربلیووالے رپورٹرزکو ذاتی اکاؤنٹس کی اداشدہ رقم بھی واپس نہیں کریں گے، سوائے ایسے چند کیسوں کے جہاں یہ اسٹیٹس رپورٹنگ کے مقاصد کے لیے لازمی ہوگا‘‘۔

خبررساں ادارے رائٹرزکی جانب سے عملہ کو بھیجے گئے ایک میمو کے مطابق پولیٹیکو بھی اپنے عملہ کی ٹویٹرپربلیوتصدیق کے لیے ادائی کی پیش کش نہیں کرے گا۔

اس سے قبل ٹویٹرنے اعلان کیاتھا کہ یکم اپریل سے متعدد اکاؤنٹس چیک مارکس سے محروم ہوجائیں گے کیونکہ سوشل میڈیا کمپنی نے اپنے وراثتی تصدیق شدہ پروگرام کو بند کرنا شروع کردیا ہے۔

ایگزیوس نے اس سے قبل ایک رپورٹ میں بتایا تھا کہ وائٹ ہاؤس اپنے عملہ کے آفیشل ٹویٹر پروفائلز کی تصدیق جاری رکھنے کے لیے مقررہ رقم ادا نہیں کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں