سعودی ویژن 2030

سعودی عرب کا عالمی نمائش بیورو کی جنرل اسمبلی میں الریاض ایکسپو 2030 کا ویژن پیش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے سینیر وزراء اور عہدے داروں پر مشتمل اعلیٰ سطح کے وفد نے منگل کے روز بیورو انٹرنیشنل ڈیس ایکسپوز(عالمی نمائش بیورو) کی 172 ویں جنرل اسمبلی میں الریاض ایکسپو 2030 کے لیے مملکت کا ویژن پیش کردیا ہے۔

سعودی عرب نے اس ویژن یکم اکتوبر 2030 سے 31 مارچ 2031 تک الریاض میں عالمی نمائش کی میزبانی پر توجہ مرکوز کی ہے۔اس کا موضوع ’’تبدیلی کا دور: ایک دور اندیش کل کے ساتھ‘‘ ہے۔

شاہی کمیشن برائے الریاض شہر کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) ابراہیم بن محمد السلطان نے ایکسپو 2030 کی میزبانی کے لیے جگہ کو مقررہ ڈیڈ لائن سے پہلے مکمل کرنے کے لیے مملکت کے عزم کا اظہار کیا ہے۔

ابراہیم بن محمد السلطان نے اپنا ویژن پیش کرتے ہوئے کہا کہ ’’ایکسپو 2030 کی میزبانی کے لیے تمام تیاریاں 2028ء تک مکمل ہوجائیں گی اور ہم 2030 میں بارہ کروڑ سے زیادہ زائرین کی میزبانی کا ارادہ رکھتے ہیں‘‘۔انھوں نے مزید کہا کہ ایکسپو سائٹ صاف توانائی پر انحصار کرے گی اور ماحولیاتی معیارات کو مدنظر رکھے گی۔

سعودی وزیر سرمایہ کاری خالد الفالح نے اعلان کیا کہ مملکت نے ایکسپو 2030 کی میزبانی کے لیے 7.8 ارب ڈالر مختص کیے ہیں۔

امریکا میں سعودی عرب کی سفیر شہزادی ریما بنت بندر نے مملکت کی تاریخ کی سب سے غیر معمولی ایکسپو کانفرنس کے انعقاد کے لیے میزبانی کے عزم اظہار کیا،الریاض کو ایک غیر معمولی عالمی سیاحتی مقام کے طور پر اجاگر کیا اور کہا کہ شہر ایکسپو 2030 کی میزبانی کے لیے مکمل طور پر تیار ہوگا۔

شہزادی ریما نے بتایا کہ الریاض میں ایکسپو 2030 میں شرکت کرنے والے افراد کو خصوصی ویزے جاری کیے جائیں گے۔

قبل ازیں سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے منگل کے روز پیرس میں 2030 میں عالمی نمائش کی میزبانی کے لیے الریاض کی کوششوں کی حمایت کے ضمن میں مملکت کے سرکاری استقبالیہ میں شرکت کی۔

شاہی کمیشن برائے الریاض شہر کی جانب سے عالمی نمائش بیورو کے 179 رکن ممالک کے مندوبین کے اعزاز میں باضابطہ استقبالیہ تقریب کا انعقاد کیا گیا۔اس تقریب کا مقصد نومبر 2023 میں اگلی جنرل اسمبلی میں ووٹنگ سے قبل عالمی نمائش کی میزبانی کے لیے الریاض کی تیاری اور اس کے منصوبوں کواجاگرکرنا تھا۔اس اسمبلی میں عالمی نمائش کے اگلے میزبان شہر کا انتخاب کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں