روس اور یوکرین

یونیسکو نے یوکرین کے شہر اوڈیسا پر روس کے وحشیانہ حملے کی مذمت کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یونیسکو نے یوکرین کے شہر اوڈیسا پر روس کے وحشیانہ حملے کی مذمت کی ہے۔روسی فوج کے میزائل حملے میں اس ساحلی شہر میں واقع عالمی ثقافتی ورثے میں شامل متعدد مقامات کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

پیرس میں قائم اقوام متحدہ کے تعلیمی،سائنسی اور ثقافتی ادارے کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ یونیسکو روسی افواج کے حملے کی شدید مذمت کرتا ہے جس میں اوڈیسا شہر کے مرکز میں واقع متعدد ثقافتی مقامات کو نقصان پہنچا ہے۔

روس کا کیف کو اناج برآمد کرنے کی اجازت دینے سے متعلق معاہدے سے دستبرداری کے بعد بحیرہ اسود کے کنارے واقع شہر پر یہ تازہ حملہ تھا۔اس میں کم از کم دو افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ اوڈیسا یوکرین کی اہم ترین بندرگاہوں میں سے ایک ہے۔

یونیسکو کی سربراہ عودرے اَزولے نے کہا کہ یہ یوکرین کے ثقافتی ورثے کے خلاف تشدد میں اضافے کی علامت ہے۔اس حملے میں اوڈیسا ٹرانسفیگریشن کیتھیڈرل کو خاص طور پر نقصان پہنچا ہے۔یہ کیتھیڈرل روس کے شاہی حکمرانی کے دور میں سنہ 1794ء میں تعمیر کیا گیا تھا مگر اسے 1936ء میں سابق سوویت رہنما جوزف اسٹالن کے دور میں منہدم کردیا گیا تھا اور سوویت یونین کے خاتمے کے بعد 1990ء کی دہائی میں اسے دوبارہ تعمیر کیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں