روس اور یوکرین

امریکہ کی طرف سے یوکرین کے لیے اسلحہ کی امداد کا آخری پیکج جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکہ نے رواں سال کے حوالے سے یوکرین کے لیے اسلحے کا آخری امدادی پیکج فائنل کر کے جاری کر دیا ہے۔ اس امدادی پیکج کی مالیت 250 ملین ڈالر ہے۔ اس میں دفاعی نظام سے متعلق بارودی اسلحہ اور کئی جدید ہتھیار شام ہیں۔

اس سال کے آخری پیکج کے لیے صدر جوبائیڈن کے مقابلے سابق صدر ٹرمپ سے جڑے ریپبلکن نمائندوں نے پیکج روکنے کی بڑی کوشش کی ہے۔ پیکج کا اعلان بدھ کے روز کیا گیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ آئندہ یوکرین کے لیے رواں سال کا آخری پیکج ہونے کے ناطے مستقبل میں یوکرین کے لیے امداد کا فیصلہ امریکی کانگریس کرسکے گی۔

امریکی صدر جوبائیڈن انتظامیہ نے یوکرین کی مدد کو اپنی ترجیح کے طور پر سامنے رکھا اور اسلحے کے علاوہ مالی امداد بھی مسلسل جاری رکھی۔ اگرچہ غزہ میں اسرائیلی جنگ کے دوران یوکرین کسی قدر امریکی نگاہوں سے اوجھل ہو گیا۔

لیکن امریکہ میں دائیں بازو کی ریپبلکن پارٹ نے اس کم ازآخری امدادی کوشش کو ناکام بنانے کی پوری کوشش کی ہے۔

امریکی دفتر خارجہ کے بیان کے مطابق اس آخری امریکی پیکج میں ائیر ڈیفنس کے نظام کے علاوہ 155 ایم ایم اور 105 ایم ایم کے توپوں کے گولے بھی یوکرین کو روس کے خلاف فراہم کے جائیں گے۔

یوکرین کے صدر ولادی میر زیلنسکی کے صدراتی معاون اینڈرے یرمارک نے امریکی امدادی پیکج کا خیر مقدم کیا ہے۔ یرمارک نے ' سوشل میڈیا کے پلیٹ فارم ' ایکس ' پر کہا ہے ' ہم آپ کی مدد کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہم جنگ جیتں گے۔ '

مقبول خبریں اہم خبریں