فلسطین اسرائیل تنازع

العاروری کے قتل کے بعد کشیدگی روکنے کے لیے ثالث ممالک متحرک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

نجی ذرائع نے العربیہ اور الحدث چینلز کو کل منگل کے روز بتایا کہ حماس نے بیروت میں صالح العاروری کے قتل کے بعد ثالث ممالک کو غزہ میں کسی بھی قسم کی جنگ بندی یا قیدیوں کے کسی بھی تبادلے کے معاہدے کو منجمد کرنے کے بارے میں مطلع کیا ہے۔

ہمارے ذرائع کے مطابق کسی بھی جنگ بندی اور قیدیوں کے تبادلے کے مذاکرات کو بھی "العاروری کے قتل کے بعد تا اطلاع ثانی " ملتوی کر دیا گیا ہے۔

ذرائع نے وضاحت کی کہ العاروری غزہ میں ایک بڑی جنگ بندی اور قیدیوں کے تبادلے کے معاہدے کے حوالے سے زیادہ مفاہمت تک پہنچنے کے لیے ثالثوں کے ساتھ گذشتہ چند دنوں سے بات چیت کر رہے تھے۔

حماس کے سیاسی بیورو کے نائب سربراہ صالح العاروری
حماس کے سیاسی بیورو کے نائب سربراہ صالح العاروری

ذرائع نے تصدیق کی کہ صالح العاروری اگلے ہفتے ثالثوں سے ملاقات کے لیے حماس کے جنگ بندی کے مطالبات پر مزید مشاورت کرنے جا رہے تھے۔

حماس نے اسرائیلی فریق کو مطلع کرنے کے لیے ثالث کے ذریعے کہا ہےکہ مستقبل میں ہونے والے کسی بھی مذاکرات سے پہلے اسرائیل ٹارگٹ کلنگ نہں کرے گا۔

ذرائع نے زور دیا کہ "حماس کے عہدیداروں نے العاروری کے قتل کی وجہ سے کسی بھی عارضی جنگ بندی کو منجمد کر دیا ہے"۔

ذرائع نے کہا کہ "ثالث فی الحال ممکنہ بڑی کشیدگی کو روکنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے تل ابیب سے رابطہ کیا ہے، جس نے انہیں بتایا کہ وہ مزید قاتلانہ کارروائیاں کرنا بند نہیں کرے گا۔ تل ابیب نے مزید کہا کہ وہ ان کارروائیوں کو روکنے کے بدلے میں جنگ بندی تک پہنچنے کوششوں کو مسترد کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں