مصر-اسرائیل سرحد پر منشیات سمگلنگ کی کارروائی ناکام بنا دی گئی ، چھ گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دو سکیورٹی ذرائع اور مصر کے القاہرہ نیوز ٹی وی نے پیر کو تادیر بتایا کہ مصر-اسرائیل سرحد پر ایک سرحدی گذرگاہ کے قریب فائرنگ کے تبادلے کے بعد مصر نے منشیات اسمگلنگ کی کوشش ناکام بنا دی جہاں غزہ کے لیے امدادی سامان کی ترسیل کا معائنہ کیا جا رہا ہے۔

سیکورٹی ذرائع نے مزید کہا کہ مصر کے جزیرہ نما سینائی میں ہونے والے واقعے کے دوران چھ منشیات سمگلروں کو العوجہ سرحدی گذرگاہ کے جنوب میں گرفتار کیا گیا - جسے اسرائیل میں نیتسانا گذرگاہ کے نام سے جانا جاتا ہے۔

ایک اسرائیلی اہلکار نے یہ بھی کہا کہ مشتبہ افراد ممکنہ طور پر مصر سے سرحد پار منشیات سمگل کرنے کی کوشش کر رہے تھے جہاں اسرائیل کے ساتھ کئی عشروں سے امن قائم ہے۔

اسرائیلی فوج کے عربی ترجمان افیخائی ادرعی نے کہا کہ 20 "مشتبہ" بشمول مسلح افراد نیتسانا کے قریب سرحد پر پہنچے۔ پھر اس علاقے میں کام کرنے والے فوجیوں نے ان پر فائرنگ کی۔

انہوں نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر مزید کہا کہ واقعے میں افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ملی۔

العوجہ-نیتسانا مصر اور غزہ کی پٹی کے درمیان مرکزی گذرگاہ رفح سے 40 کلومیٹر (25 میل) سے کچھ زیادہ جنوب میں ہے۔

اسرائیل اور مصر سنہ 2007 سے اس علاقے کی ناکہ بندی برقرار رکھے ہوئے ہے جب فلسطینی گروپ حماس نے وہاں کا کنٹرول سنبھالا تھا۔

7 اکتوبر کو اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ شروع ہونے کے بعد سے غزہ میں انسانی امداد کی ترسیل کے لیے رفح مرکزی داخلی اور خارجی راستہ رہا ہے۔

اسرائیل نے نیتسانا میں زیادہ تر امداد کا معائنہ کیا ہے۔

اسرائیل کے ساتھ مصر کی سرحد پر سکیورٹی کے واقعات نسبتاً شاذ و نادر ہوتے ہیں حالانکہ سینائی سے سمگلنگ کی سرگرمیوں کی ایک طویل تاریخ ہے۔

مصر نے حالیہ برسوں میں اپنی سرحد کے اطراف میں سکیورٹی بڑھا دی ہے اور غزہ کے ساتھ اپنی سرحد کے قریب ایک بفر زون خالی کر دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں