ہنگامی لینڈنگ کے بعد 17 مراکشی باشندوں کی اطالوی ہوائی اڈے سے فرار کی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

17 مراکشی مسافروں نے اطالوی ہوائی اڈے سےاس وقت فرار ہونے کی کوشش کی جب ان کا طیارہ ہنگامی طور پر اترا۔ یہ پرواز استنبول سے مراکش جا رہی تھی۔ طیارے کے کپتان کو مجبوراً طیارے کو قریبی ہوائی اڈے روم "فیومیسینو" کی طرف اس وقت موڑا گیا جب جہاز میں ایک مسافر کو دل کا دورہ پڑا۔

ہسپانوی اخبار'لارازون' سے بات کرنے والے ایک ذریعے کے مطابق تمام نوجوان مراکشی باشندوں کو ترکیہ سے ملک بدر کر دیا گیا تھا۔ ان کا سفر جاری رکھنے کا کوئی ارادہ نہیں تھا۔ اس لیے انہوں نے اطالوی ہنگامی عملے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے مسافر کو طیارے کے پیچھے سے فرار ہونے کی کوشش کی۔

ذریعے نے مزید کہا کہ مراکش کے نوجوان کی کوشش ناکام ہوگئی، جب انہیں اطالوی سکیورٹی سروسز نے روکا، جو طیارے کے اترتے ہی اس مقام پر پہنچی۔ کپتان نے اطالوی حکام کی تصدیق کے بعد تانگیر کے لیے پرواز دوبارہ شروع کردی۔

یہ پہلا واقعہ نہیں ہے جب کی طیارے کےمسافروں نے ہنگامی لینڈنگ کے دوران فرار کی کوشش کی ہے۔ اس سے قبل جولائی 2022 میں اسپین کے شہر بارسلونا میں مراکش کے 28 مسافروں نے کاسا بلانکا سے آنے والے طیارے سے فرار ہونے کی کوشش کی تھی۔

اس سے پہلے ہسپانیہ کے پالما ڈی میلورکا ہوائی اڈے پر نومبر 2021 میں بھی ایسا ہی ایک واقعہ دیکھنے میں آیا تھا، جب مراکش کے مسافروں کا ایک گروپ جو کاسا بلانکا سے استنبول جانے والی پرواز میں تھا ہنگامی لینڈنگ کے بعد طیارے سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں