شامی شہری نے چاقو کے وار سے اپنی بیوی قتل کردی:سی سی ٹی وی کیمروں میں انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ترکیہ میں شوہر کے ہاتھوں بیوی کے لرزہ خیز قتل نے ایک بار پھرریاست غازی عنتاب کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔

ایک عمارت پر لگے نگرانی کے کیمروں نے ترکیہ میں ایک شامی شہری کی طرف سے کیے گئے خوفناک جرم کا انکشاف پردہ چاک کردیا۔ اس نے جان بوجھ کر اپنی بیوی کو قتل کر کے اس کی لاش کو کوڑے دان میں پھینک دیا مگر کیمروں نے یہ ساری واردات ریکارڈ کرلی۔

شام کی سرحد پر واقع جنوبی ریاست غازی عنتاب میں رہنے والے عبدو جواد نامی شخص نے اپنی بیوی دیبہ کو قتل کر دیا۔ یہ واقعہ دوہفتے میں اپنی نوعیت کا دوسرا کیس ہے۔ تاہم اس واقعے نے اس حوالےسے کئی سوالات پیدا کردیے ہیں کہ آیا اس طرح کے واقعات کے پیچھے کیا وجوہات ہیں؟۔

ترک پولیس کی طرف سے بتائی گئی تفصیلات میں 30 سالہ دیبہ کی لاش ریاست غازی عنتاب میں اس کی رہائش گاہ سے صرف چند میٹر کے فاصلے پر کوڑے کے ڈھیر میں پھینکی گئی ملی۔ وہ اپنے اہل خانہ کے ساتھ کارشیاکا کے علاقے میں مقیم تھی جہاں بڑی تعداد میں شامی پناہ گزین رہ رہے ہیں۔

شوہرنے بیوی کی لاش پیٹھ پر اٹھا رکھی تھی

دریں اثنا نگرانی کے کیمرے کی ریکارڈنگ میں دکھایا گیا ہے کہ مقتولہ کا شوہر اس کی لاش کو کپڑے میں لپیٹ کر اپنی پیٹھ پر اٹھائے ہوئے تھا اور اپنی رہائش گاہ سے 30 میٹر دور ایک کنٹینر کی طرف جا رہا تھا۔

ایک اور ویڈیو کلپ میں دکھایا گیا ہے کہ دو امدادی کارکن ایک ایمبولینس کے ساتھ کچرے کے کنٹینر پر کھڑے ہیں۔ بعد میں لاش کو نکال کر پوسٹ مارٹم کے لیے ایک مقامی ہسپتال منتقل کیا گیا۔

چاقو کے وار

ادھر ترک ویب سائٹس نے بتایا کہ جواد نے اپنی بیوی کو چھریوں کے وار کر کے اس کا قتل کردیا۔ پھر اس کی لاش کوڑے میں پھینک کر نظروں سے اوجھل ہو گیا، تاہم پولیس نے اسے گرفتار کرلیا۔

ادیبہ جسے چھریوں کے وار کر کے قتل کیا گیا تین چھوٹے بچوں کی ماں ہے، اور راہگیروں کو اس کی لاش اس وقت ملی جب وہ کوڑے کے تھیلے کنٹینر میں پھینک رہے تھے۔

اگرچہ ترک پولیس نے گزشتہ منگل کو دیبہ کی لاش ملنے کے بعد سے تحقیقات شروع کر دی تھیں، تاہم انہوں نے ابھی تک اس جرم کی وجوہات کا اعلان نہیں کیا ہے۔

شامی شوہر کو سکیورٹی تحقیقات مکمل ہونے کے بعد عدالت میں پیش کیا جائے گ

تیس سالہ خاتون کے قتل نے غازی عنتاب میں شامی اور ترک حلقوں میں صدمے کی لہر دوڑا دی۔ حال ہی میں شامی پناہ گزینوں میں خواتین کے قتل کے واقعات دہرائے گئے ہیں۔

یہ جرم بھی ایک سابقہ جرم جیسا ہے جو دو ہفتے قبل پیش آیا تھا۔ اس میں ایک اور شامی خاتون ہلاک ہو گئی تھی، جسے اس کے شوہر نے جنوب مشرقی ترکیہ کی ریاست ماردین میں چاقو کے وار کر کے قتل کر دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں