یورپی انتخابات میں شکست کے بعد میکروں نے پارلیمنٹ تحلیل کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فرانسیسی صدر عمانویل میکروں نے اتوار کی شام پارلیمنٹ تحلیل کرنے اور نئے قانون ساز انتخابات کے انعقاد کا اعلان کیا ہے۔ یہ اعلان یورپی انتخابات کے بعد کیا گیا ہے جس میں فرانسیسی انتہائی دائیں بازو کے یورپی انتخابات میں صدارتی اکثریتی کیمپ پر بڑے مارجن سے کامیابی حاصل کی ہے۔

میکروں نے ایک ٹیلی ویژن خطاب میں کہا کہ "میں جلد ہی 30 جون کو پہلے مرحلے کے لیے قانون سازی کے انتخابات اور سات جولائی کو دوسرے مرحلے کے انعقاد کے حکم نامے پر دستخط کروں گا"۔

میکرون نے صدارتی محل سے قوم سے خطاب میں کہا کہ "میں نے ووٹ کے ذریعے اپنے پارلیمانی مستقبل کا انتخاب آپ کے پاس واپس کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس لیے میں قومی اسمبلی کو تحلیل کر رہا ہوں"۔

ان قبل از وقت انتخابات کا جواز پیش کرنے کے لیے میکروں نے کہا کہ فرانس کو "پرسکون اور ہم آہنگی سے کام کرنے کے لیے واضح اکثریت کی ضرورت ہے"۔ انہوں نے کہا کہ میں نے فرانسیسیوں کے پیغام اور خدشات کو سنا۔ میں ان کے تمام خدشات کو دور کروں گا‘‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ یورپی انتخابات کے نتائج "یورپ کا دفاع کرنے والی جماعتوں کے لیے اچھے نہیں ہیں"۔ انتہائی دائیں بازو نے فرانس میں "تقریباً 40 ووٹ فی صد" حاصل کیے ہیں۔

عمانویل میکروں نے کہا کہ "قوم پرستوں اور ڈیماگوگز کا عروج ہماری قوم کے ساتھ ساتھ یورپ اور دنیا میں فرانس کی پوزیشن کے لیے خطرہ ہے"۔

پیرس میں پورپی پارلیمنٹ کے چناؤ کے لیے ووٹنگ
پیرس میں پورپی پارلیمنٹ کے چناؤ کے لیے ووٹنگ

فرانس کے انتہائی دائیں بازو نے جورڈن بارڈیلا کی قیادت میں اتوار کو فرانس میں ہونے والے یورپی انتخابات میں 31.5 سے 32.5 فیصد کے درمیان ووٹ حاصل کر کے کامیابی حاصل کی۔

صدارتی اکثریتی پارٹی 15 فی صد ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہی اور سوشل ڈیموکریٹ رافیل گلکس مین فارمیشن 14 فی صد کے ساتھ تیسرے نمبر پر رہی۔

یہ فرانسیسی صدر کی اکثریت کے لیے ایک زبردست ناکامی ہے، جس سے انتہائی دائیں بازو کی "قومی ریلی" 2019 کے انتخابات میں ایک فیصد پوائنٹ آگے تھی، جس نے اس وقت صدارتی اکثریت کے لیے 22.42 فی صد کے مقابلے میں 23.34فی صد ووٹ حاصل کیے تھے۔

ان اندازوں کے اعلان کے بعد 28 سالہ بارڈیلا نے فرانس میں قانون سازی کے انتخابات کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ "صدر فرانسیسی عوام کی طرف سے بھیجے گئے پیغام کو نظر انداز نہیں کر سکتے۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اس نئی سیاسی صورتحال پر توجہ دیں۔ فرانسیسی عوام سے اپیل کریں اور نئے قانون ساز انتخابات کا اہتمام کریں"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں