دمشق میں ایرانی پاسداران اور حزب اللہ کے ارکان کی موجودگی کی تصدیق

دمشق کے نواح سے حزب اللہ کے ارکان گرفتارکرنے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شام کے دارالحکومت دمشق کے نواحی علاقے السیدہ زینب میں جیش الحر کے جنگجوؤں نے پاسداران انقلاب ایران کے العباس بریگیڈ کے کمانڈر سمیت لبنانی حزب اللہ کے متعدد ارکان کو حراست میں لے لیا ہے۔

شامی میڈیا سینٹر نے دمشق کے علاقے الحجرالاسود پر بھی میزائل اور توپ خانے سے حملے کی تصدیق کی ہے۔ ادھر درعا کے علاقے خربہ غزلہ میں سرگرم مقامی کوآرڈی نیشن کمیٹی نے بتایا کہ شامی فوج کے ٹو اور پچاس بریگیڈ نے درعا بلدیہ پر شدید گولا باری کی گئی ہے۔

ادھر شامی فوج نے دمشق کے وسط میں حزب اللہ اور ایرانی پاسداران انقلاب کے اہلکاروں کی تعیناتی کی علانیہ تصدیق کی ہے۔ جیش الحر کی مشترکہ داخلی کمان کے ترجمان فھد المصری نے بتایا ہے کہ علانیہ طور پر دمشق کے وسط میں حزب اللہ اور ایرانی پاسداران انقلاب کے ارکان کی تعیناتی کی تصدیق ہوئی ہے۔

درایں اثناء شامی جیش الحر نے بتایا کہ درعا کے نواح میں تعینات بریگیڈ ٹو اور پچاس سے تعلق رکھنے والے دس اہلکار منحرف ہو کر ان کی ''محفوظ'' پناہ میں آ گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں