حسن نصراللہ کی سرکردہ شیعہ رہ نما سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لبنان کی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے سربراہ شیخ حسن نصراللہ نے عراق کے جنوبی شہر النجف سے تعلق رکھنے والے سرکردہ شیعہ رہ نما آیت اللہ بشیرالنجفی سے ملاقات کی ہے۔

پاکستانی نژاد بشیرالنجفی لبنان کے دارالحکومت بیروت میں طبی معائنے کے لیے آئے ہیں۔شیخ حسن نصراللہ نے ان سے کسی خفیہ مقام پر ملاقات کی ہے اور اس کی مزید تفصیل نہیں بتائی گئی ہے۔واضح رہے کہ حزب اللہ کے سربراہ اسرائیل کے ممکنہ حملے کے خطرے کے پیش نظر کبھی کبھار ہی منظرعام پر آتے ہیں اور وہ بالعموم جنوبی بیروت میں واقع کسی خفیہ مقام سے ہی اپنے پیروکاروں سے مخاطب ہوتے ہیں۔

حزب اللہ کے میڈیا دفتر نے اطلاع دی ہے کہ حسن نصراللہ نے آیت اللہ العظمیٰ بشیر النجفی سے ملاقات میں مسلم امور کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا ہے لیکن اس نے یہ نہیں بتایا ہے کہ یہ ملاقات کہاں ہوئی ہے۔

آیت اللہ بشیرالنجفی گذشتہ ہفتے طبی معائنے کے لیے بیروت پہنچے تھے۔ان کے مختلف ٹیسٹ کیے جائیں گے۔وہ النجف میں مقیم سرکردہ چار شیعہ علمائے دین میں سے ایک ہیں اور اہل تشیع میں انھیں دنیا بھرمیں سب سے بااثر عالم سمجھا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں