.

النصرہ محاذ کی خاتون کو گولی مارنے کی ویڈیو جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام میں القاعدہ کی بغل بچہ تنظیم النصرہ محاذ کے ہاتھوں انسانی حقوق کی سنگین پامالی کا عمل نہ صرف جاری ہے بلکہ اس میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ النصرہ کے جنگجوئوں نے ایک ہفتے کے دوران تین خواتین کو گولی مار کراپنی سفاکیت پر مہرتصدیق ثبت کر دی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق النصرہ فرنٹ کے دہشت گردوں نے ادلب کے نواحی علاقے ’خفسرجہ’ کی ایک خاتون کو مبینہ طور پر ’جسم فروشی‘ کے الزام میں قتل کرنے کے بعد اس کی ویڈیو فوٹیج بھی انٹرنیٹ پر پوسٹ کر دی۔

ویڈیو شیئرنگ ویب سائیٹ’’یوٹیوب‘‘ پر پوسٹ کی گئی تصویری فوٹیج جسے بعد ازاں ہٹا دیا گیا میں ایک خاتون کو جنگجوئوں کے ہاں یرغمال دکھایا گیا ہے۔ بعد میں مبینہ بداخلاقی کے فروغ کے الزام میں اس کے سر پر گولی ماری گئی۔