.

مصر : صدر السیسی کی کابینہ میں 10 نئے وزراء کا تقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی نے اپنی کابینہ میں رد و بدل کیا ہے اور خزانے اور سرمایہ کاری سمیت دس محکموں کے نئے وزراء کا تقرر کیا ہے۔

مصری ایوان صدر کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ تجربے کار بنک کار عمروالجرحی کو وزیر خزانہ اور دالیا خورشید کو سرمایہ کاری کا وزیر مقرر کیا گیا ہے۔

مصری حکومت اس وقت ملکی معیشت کی بحالی کے لیے کوشاں ہے اور ان نئے وزراء کا تقرر اسی تناظر میں کیا گیا ہے۔مصر کے مرکزی بنک نے گذشتہ ہفتے ملکی کرنسی پاؤنڈ کی قدر میں بھی کمی کردی تھی جبکہ مصر کو درآمدات کے لیے ڈالرز کی کمی کا سامنا ہے۔

صدر عبدالفتاح السیسی نے چار نئے نائب وزراء کا بھی تقرر کیا ہے۔ان میں ایک کو محکمہ منصوبہ بندی کا قلم دان سونپا گیا ہے۔تین نائب وزراء کو خزانہ امور،ٹیکس پالیسی اور مالیاتی پالیسی کے قلم دان سونپے جائیں گے۔

محمد حسام عبدالرحیم کو نیا وزیرانصاف مقرر کیا گیا ہے۔ان کے پیش رو احمد الزند کو صدر عبدالفتاح السیسی نے دس روز قبل توہینِ رسالت پر مبنی بیان دینے پر برطرف کردیا تھا۔ان کے علاوہ نوادارت ،پبلک سیکٹر ،محنت ، آب پاشی ،سول ایوی ایشن ،ٹرانسپورٹ اور سیاحت کے نئے وزراء مقرر کیے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ گذشتہ سال اکتوبر میں مصر کے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں روس کے ایک مسافر طیارے کے دوران پرواز تباہ ہونے کے بعد سیاحت کی صنعت بری طرح متاثر ہوئی ہے۔اس حادثے میں 224 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

داعش نے روسی طیارے میں بم نصب کرنے کی ذمے داری قبول کی تھی۔اس واقعے کے وجہ سے مصر کی سول ایوی ایشن کی وزارت بھی تنقید کی زد میں آئی تھی اور یہ کہا گیا تھا کہ ائیرپورٹ پر سکیورٹی میں سقم کی وجہ سے داعش کے جنگجو بم طیارے کے اندر لے جانے میں کامیاب ہوگئے تھے۔