.

سلامتی کونسل حلب کے معاملے میں فوری مداخلت کرے : الزیانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خلیج تعاون کونسل کے رکن ممالک نے شام کے شہر حلب اور اس کے رہائشی علاقوں پر فضائی بم باری کی سخت مذمت کی ہے۔

کونسل کے سکریٹری جنرل عبداللطيف الزيانی کا کہنا ہے کہ کونسل کے ممالک حلب شہر پر مسلسل حملوں ، اس کے اہلیان کے قتل اور وہاں کے رہائشی علاقوں کی منظم تباہی کی شدت سے مذمت کرتے ہیں۔ الزیانی کے مطابق یہ کھلی جارحیت ہے جو بین الاقوامی قوانین اور انسانیت اور اخلاقیات کے بنیادی اصولوں کی خلاف ورزی ہے۔

الزیانی نے باور کرایا کہ کونسل کے ممالک عالمی برادری پر زور دیتے ہیں کہ حلب اور شام کے دیگر شہروں کے اہلیان کے خلاف مختلف ممنوعہ ہتھیاروں کے ذریعے مرتکب بدترین جرائم کی مذمت کی جائے.. ساتھ ہی سلامتی کونسل سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ حلب میں جارحیت کو روکنے اور شامی عوام کی مشکلات کو ختم کرنے کے لیے فوری طور پر مداخلت کرے۔

دوسری جانب کویت نے عرب لیگ اور اسلامی تنظیم کانفرنس سے مطالبہ کیا ہے کہ شام کے شہر حلب میں مخدوش انسانی صورت حال کو زیر بحث لانے کے لیے مندوبین کی سطح کے فوری اور ہنگامی اجلاس بلائے جائیں۔ کویتی وزیر خارجہ الشيخ صباح خالد الحمد الصباح نے متعدد ذمہ داران کے ساتھ حلب میں بحران زدہ انسانی صورت حال اور اس حوالے سے کوآرڈی نیشن کے طریقوں پر بات چیت کی۔

کویتی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ اس سلسلے میں وزیر خارجہ کا جن شخصیات سے ٹیلیفونک رابطہ ہوا ان مصری وزیر خارجہ سامح شكری ، خلیج تعاون کونسل کے سکریٹری جنرل عبداللطيف الزيانی، عرب لیگ کے سکریٹری جنرل احمد ابوالغيط اور اسلامی تعاون تنظیم کے سکریٹری جنرل ایاد مدنی شامل ہیں۔