.

عشائیے کی میز پر ملانیا اور پیوتن ایک ساتھ.. ٹرمپ کہاں رہے ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جرمنی میں جی -20 اجلاس کے دوران عشائیے کی میز پر امریکی صدر کی اہلیہ ملانیا ٹرمپ کا روسی صدر ولادیمر پیوتن کے برابر میں بیٹھنا کیا محض ایک اتفاق تھا؟

اس کا جواب کوئی نہیں جانتا مگر عالمی ذرائع ابلاغ نے غیر رسمی دوستانہ فضا کو ظاہر کرتی تصاویر نشر کرنے کے ساتھ اس موقع پر "عشائیے کی سفارت کاری" کی اصطلاح کا استعمال کیا ہے۔

جرمن چانسلر اینگلا مرکل کی جانب سے جی - 20 اجلاس میں شریک سربراہان اور ان کی بیگمات کے لیے جمعے کی شب عشائیے کا اہتمام کیا گیا تھا۔ اس دوران اکثر شخصیات اور ان کی بیگمات باہمی گفتگو اور تعارف کے واسطے علاحدہ بیٹھے نظر آئے۔

خبر رساں ایجنسیوں کی جانب سے جاری عشائیے کی تصاویر میں امریکی خاتونِ اوّل ملانیا ٹرمپ سفید لباس میں روسی صدر ولادیمر پیوتن کے ساتھ بیٹھی نظر آئیں۔

واضح رہے کہ ٹرمپ اور پیوتن کے درمیان ملاقات جمعے کے روز پہلے ہی کسی وقت ہو چکی تھی۔ امریکا میں گزشتہ برس صدارتی انتخابات میں روس کے ممکنہ کردار کے حوالے سے امریکا میں بھڑکنے والے داخلی بحران کے بعد یہ دونوں شخصیات کے درمیان پہلی بالمشافہ ملاقات ہے۔

ملانیا اور پیوتن کے درمیان بات چیت کے لیے ایک مترجم بھی موجود تھا۔ تاہم اس گفتگو کے حوالے سے کوئی بات اِفشا نہیں ہوئی ہے۔

کیمروں کی آنکھ نے امریکی صدر ٹرمپ کو تلاش کیا تا کہ اُن خاتون کے بارے میں جانا جا سکے جن سے وہ عشائیے کے دوران محوِ گفتگو تھے۔ بعض تصاویر میں ٹرمپ کو ارجنٹائن کے صدر کی اہلیہ جولیانا عواضہ کے ساتھ گفتگو اور مسکراہٹوں کا تبادلہ کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔