قطر نے صہیونی لابیوں کی جیبوں میں 14.5 لاکھ ڈالر پہنچائے ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیل میں ایک انگریزی روزنامے نے انکشاف کیا ہے کہ قطر نے امریکا میں کام کرنے والے ایک امریکی صہیونی گروپ کی سپورٹ کے لیے ایک لاکھ ڈالر کی رقم ادا کی۔ یہ عطیہ ایک ایسے کاروباری شخص کے توسط سے دیا گیا جو اسرائیل کے لیے سپورٹ اور وفاداری کے حوالے سے جانا جاتا ہے۔

اسرائیلی اخبار "دی ٹائمز آف اسرائیل" کے مطابق قطر کی جانب سے سپورٹ کی مد میں مذکورہ رقم (Zionist Organization of America) کو دی گئی جس کو مخفّف (ZOA) ہے۔ یہ امریکا میں اسرائیل کو سپورٹ کرنے والی نمایاں ترین تنظیموں میں سے ہے اور امریکا کی جانب سے اسرائیلی قبضے کا دفاع بھی کرتی ہے۔

قطر کے مفاد میں صہیونی تنظیم کو اس رقم کی ادائیگی کرنے والا ثالثی جوزف اللحام ہے جو اسرائیل کا ہمنوا ایک معروف امریکی تاجر ہے۔

اللحام کے مطابق دائیں بازو کے اس صہیونی گروپ کے لیے ادا کی جانے والی رقم قطر کی جانب سے عطیے کا ایک حصّہ ہے جس کا مجموعی حجم 14.5 لاکھ ڈالر ہے۔

اخبار کے مطابق امریکی تاجر نے انکشاف کیا کہ قطر کے اس عطیے کا مقصد سعودی عرب کے ساتھ اپنے اختلاف کے معاملے میں امریکا میں یہودی قیادت اور دیگر حلقوں کو دوحہ کے ساتھ ملانے کے واسطے لابنگ کرنا تھی۔

ادھر مالی سپورٹ حاصل کرنے والی صہیونی تنظیم کے سربراہ مورٹن کلائن نے یہ اشارہ دینے کی کوشش کی کہ ان کے علم میں نہیں تھا کہ اس رقم کا ذریعہ قطر ہے۔ کلائن نے دعوی کیا کہ اگر اس امر کی تصدیق ہو گئی کہ یہ عطیہ قطر کی جانب سے تھا تو وہ اس رقم کو واپس لوٹا دیں گے۔

اسرائیلی اخبار "دی ٹائمز آف اسرائیل" کے مطابق مورٹن کلائن نے کچھ عرصہ قبل قطر کا دورہ کیا تھا اور دوحہ حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا۔ اس دورے کا مقصد حماس تنظیم کے لیے دوحہ کی سپورٹ اور قطر اور ایران کے نزدیک آنے پر تشویش کا اظہار کرنا تھا۔

جوزف اللحام نے امریکی حکام کے سامنے انکشاف کیا کہ اس نے Our Soldiers Speak نامی گروپ کو ایک لاکھ ڈالر کی مالی سپورٹ پیش کی۔ یہ اسرائیلی فوج کو سپورٹ کرنے والا ایک امریکی گروپ ہے۔ اللحام نے معروف مسیحی مبلغ مائیک ہوکابی کو بھی 50 ہزار ڈالر کی رقم پیش کی۔ وہ "پرو اسرائیل" کرسچن کمیونٹی کی ایک نمایاں شخصیت ہے۔

اخبار نے امریکا میں یہودی کمیونٹی کی ایک اہم ترین شخصیت کے لیے بھی قطر کی فنڈنگ کا انکشاف کیا ہے۔ اس شخص کا نام نِک میوزین ہے۔ اسے ملنے والی رقم کا مقصد امریکا میں قطر کے مفاد کے لیے تعلقات عامہ استوار کرنا تھا۔

اخبار کے مطابق امریکا میں یہودی کمیونٹی اور صہیونی لابی سے تعلق رکھنے والی شخصیات کی ایک بڑی تعداد نے گزشتہ برس قطر کا دورہ کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں