.

حمص کے فوجی اڈے پر اسرائیلی حملے میں ایرانیوں کی ہلاکت کی اطلاعات؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے سرکاری ذرائع ابلاغ نے دعویٰ کیا ہے کہ اتوار کے روز وسطی شہر حمص میں ’التیفور‘ فوجی اڈے پر میزائل حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں ایک جنگی طیارے کو نقصان پہنچا ہے۔ سرکاری میڈیا کے مطابق یہ میزائل اسرائیل کی طرف سے داغا گیا تھا۔

خبر رساں ادارے’سانا‘ نے ایک فوجی افسر کے حوالے سے بتایا کہ حمص کے التیفور فوجی اڈے پر میزائل حملہ کیا گیا تھا مگر سے ناکام بنا دیا گیا ہے۔ آزاد ذرائع سے حملے کی نوعیت، اس کے نتیجے میں ہونے والے نقصان اور حملہ آور کی تصدیق نہیں ہوسکی۔

جنوبی صحرا میں تعینات شامی فوج کے ایک عہدیدار نے کہا کہ فضائی دفاعی نظام کے ذریعے حمص کے ہوائی اڈے کی طرف داغا جانے والا ایک میزائل التنف کے مقام پر مار گرایا گیا ہے۔

ادھرانسانی حقوق کی صورت حال پرنظر رکھنے والی شامی آبزرویٹری کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمان نے بتایا کہ حمص گورنری میں تدمر کے قریب التیفور ہوائی اڈے پر میزائل حملہ کیا گیا۔ ان کا کہنا تھا التیفور اڈے پر ایرانی جنگجوأں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

رامی عبدالرحمان کا کہنا تھا کہ التیفور ہوائی اڈے پر اسدی فوج کے ساتھ ایرانی اور لبنانی حزب اللہ ملیشیا کے جنگجو بھی موجود ہیں۔

خیال رہے کہ التیفور فوجی اڈہ ماضی میں بھی فضائی حملوں کا نشانہ بن چکا ہے۔ شامی حکومت اس اڈے پرحملوں کا الزام اسرائیل پر عاید کرتی ہے۔ رواں سال اپریل میں ہونے والے ایک فضائی حملے میں 14 افراد ہلاک ہوگئے تھے جن میں سات ایرانی جنگجو بتائے جاتے ہیں۔