ایران: وزیر صنعت اور وزیر ٹرانسپورٹ کے استعفے منظور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران میں ایوانِ صدارت کی جانب سے ایک اعلان میں بتایا گیا ہے کہ صدر حسن روحانی نے وزیر صنعت محمد شريعتمداری اور وزیر ٹرانسپورٹ عباس آخوندی کے استعفے منظور کر لیے ہیں۔

روحانی اور ان کی حکومت کو ارکان پارلیمنٹ کی جانب سے بڑھتے ہوئے دباؤ کا سامنا ہے۔ یہ ارکان پارلیمنٹ ملک کو درپیش اقتصادی بحران سے نمٹنے کے طریقہ کار پر صدر اور حکومت کو ملامت کا نشانہ بنا رہے ہیں۔ اسی دباؤ کے باعث رواں سال اگست میں پارلیمنٹ نے وزیر محنت اور وزیر معیشت پر عدم اعتماد کا اظہار کر کے انہیں گھر بھیج دیا تھا۔

ادھر ایرانی اقتصادی ماہر حسین راغفر کے مطابق آئندہ ہفتوں کے دوران ملک کو زیادہ وسیع پیمانے پر غذائی قلّت اور احتجاجی مظاہروں کا سامنا متوقع ہے۔

ایران کی ایک نیوز ویب سائٹ "الف" کے مطابق راغفر نے خبردار کیا ہے کہ آنے والے دنوں میں ایرانی عوام کی جانب سے بغاوت دیکھنے میں آ سکتی ہے۔

ایرانی اقتصادی ماہر نے توقع ظاہر کی کہ ملک میں گیارہ لاکھ ملازمتوں کے بربادی کے ساتھ بے روزگاری کا حالیہ بحران مزید سنگین ہو جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں