.

اتحادی فوج کی شام میں شہریوں کو نشانہ بنانے کی تردید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کی قیادت میں "داعش" کے خلاف سرگرم عالمی اتحادی فوج نے شام کے شہر دیر الزور میں فضائی حملوں کے دوران شہریوں کو نشانہ بنانے کی خبروں کی سختی سے تردید کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عالمی اتحادی فوج کے ایک عہدیدار نے کہا ہے کہ دیر الزور میں اتحادی فوج کے جنگی طیاروں نے ایسی کوئی بمباری نہیں کی جس کے نتیجے میں درجنوں افراد مارے گئے ہیں۔

ادھر شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھنے والے ادارے "آبزر ویٹری" نے بتایا ہے کہ جمعہ کےروز شام کے شہر دیر الزور میں امریکی فضائی حملوں میں بچوں اور خواتین سمیت 40 عام شہری مارےگئے۔ یہ علاقہ شام میں "داعش" کے زیرتسلط ہے۔

عالمی فوج کی طرف سے اس واقعے پر فوری رد عمل جاری نہیں کیا گیا تاہم کہا گیاہے کہ ہم کسی بھی فضائی حملے سے قبل عام شہریوں کے جانی نقصان سے بچنے کی پوری کوشش کرتے ہیں اور شہریوں کے جان ومال کا تحفظ یقینی بناتے ہیں۔

انسانی حقوق آبزر ویٹری کے مطابق جنگی طیاروں‌نے عراق کی سرحد کےقریب ابو الحسن اور ھجین کے مقامات پر بمباری کی جس کے نتیجے میں40 سے زاید شہری مارے گئے۔