عراقی صدر نے برطانوی شہریت ترک کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جمہوریہ عراق کے صدر برھم صالح نے دستور پرعمل درآمد کرتے ہوئے برطانوی شہریت ترک کر دی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عراقی ایوان صدر کے ترجمان لقمان الفیلی نے بتاہا کہ صدر برھم صالح اپنی برطانوی شہریت سے دست بردار ہوگئے ہیں۔

صحافیوں سے بات کرتے ہوئے عراقی ایوان صدر کے ترجمان کا کہنا تھا کہ برھم صالح نے صدر منتخب ہونے کے بعد دوہری شہریت ترک کرنے کا فیصلہ کرلیا تھا۔ آئین کے تحت وہ ریاست کا اعلیٰ ترین منصب اپنے پاس رکھتے ہوئے کسی دوسرے ملک کی شہریت نہیں رکھ سکتے۔ وہ برطانوی شہریت ترک کرنے کے لیے قانونی تقاضے پورے کررہے ہیں۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ برھم صالح نے شہریت دینے پر برطانیہ کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ سابق عراقی نظام کے دوران برطانیہ نے انہیں شہریت دی تھی، مگر آج وہ حکومت کا حصہ رہتے ہوئے دستور کے مطابق دوسرے ملک کی شہریت نہیں رکھ سکتے۔

خیال رہے کہ عراق کےدستور کے آرٹیکل 18 کے تحت ریاست کے اعلیٰ عہدے رکھنے والے افراد دہری شہریت رکھنے کے مجاز نہیں۔ انہیں عہدے یا دوسری شہریت میں سے کسی ایک سے دست بردار ہونا پڑتا ہے۔
عراق کے نو منتخب صدر برھم صالح صدر بنتے ہی برطانوی شہریت سے دست بردار ہوگئے تھے۔ انہوں‌نے اس حوالے سے ضروری قانونی کارروائی شروع کردی تھی تاہم اس کا اعلان نہیں کیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں