یمن : حجہ صوبے میں سرکاری فوج کا نئے ٹھکانوں پر کنٹرول

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن کے صوبے حجہ میں سرکاری فوج نے باغی حوثی ملیشیا کے ساتھ معرکوں کے بعد نئی کامیابیاں حاصل کی ہیں۔

ایک فوجی ذریعے کے مطابق یمنی فوج نے پیر کے روز ضلع عبس میں الطینہ کا گاؤں آزاد کرا لیا۔ ذریعے نے باور کرایا کہ اس وقت گھمسان کی لڑائی جاری ہے اور اس دوران مذکورہ ضلع میں یمنی فوج الجر کے کھیتوں کی جانب بڑھ رہی ہے۔ معرکے کے دوران باغی حوثی ملیشیا کے متعدد ارکان ہلاک اور زخمی ہو گئے جب کہ دو جنگجوؤں کو قیدی بنا لیا گیا۔

اس سے قبل یمنی فوج نے گزشتہ جمعرات کے روز عرب اتحاد کی فورسز کی معاونت سے ایک بڑا عسکری آپریشن شروع کیا تھا۔ اس آپریشن کے دوران عبس ضلع میں متعدد دیہات آزاد کرا لیے گئے۔ ان کے علاوہ یمنی فوج نے عبس شفر تک آنے والے بین الاقوامی راستے کی سپلائی لائن کاٹ دی۔ اس دوران حوثی ملیشیا کو بھاری جانی اور مادی نقصان اٹھانا پڑا۔

لڑائی کے دوران حوثیوں کی جانب سے توپ کی گولہ باری کے سبب عبس ضلع کے مشرق میں واقع کئی دیہات سے شہریوں کی ایک بڑی تعداد نقل مکانی کر گئی۔

یمن کے صوبے حجہ میں شاہ سلمان امدادی مرکز کے پروگرام کے ڈائریکٹر انس العرقبی نے بتایا ہے کہ حیران ضلع کا رخ کرنے والے خاندانوں کی تعداد 500 سے زیادہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں