.

عرب اتحاد نے حجّہ میں اپنی کارروائی کے نتائج حادثات کی جائزہ ٹیم کے حوالے کر دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کی فورسز کے سرکاری ترجمان کرنل ترکی المالکی کا کہنا ہے کہ اتحاد کی مشترکہ فورسز کی کمان نے آپریشنز ریجن میں ایک کارروائی کے نتائج کو حادثات کا جائزہ لینے مشترکہ ٹیم کے حوالے کر دیا ہے تا کہ کسی حادثے کے واقع ہونے کے امکان پر نظر کی جا سکے۔

سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی SPA کے مطابق کرنل المالکی نے مزید بتایا کہ اتحادکی مشترکہ فورسز کی کمان نے آپریشنز ریجن میں 11 اگست بروز اتوار ہونے والی کارروائیوں کے بعد کے اقدامات کا جائزہ مکمل کر لیا ہے۔ باریک بینی کے ساتھ لیے جانے والے جامع جائزے اور کارروائیاں انجام دینے والے اہل کاروں کی وضاحت سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ اس روز حجہ صوبے میں "حوثی ملیشیا کے جنگجو عناصر کے جتھوں" کو نشانہ بنانے کے دوران شہریوں کے جانی نقصان کا امکان ہے۔ اس بنا پر واقعے سے متعلق تمام دستاویزات حادثات کا جائزہ لینے والی مشترکہ ٹیم کو دے دیے گئے ہیں تا کہ وہ ان کا بغور جائزہ لے اور اس حوالے سے نتائج کا اعلان کرے۔

کرنل المالکی نے باور کرایا کہ اتحادی فورسز کی مشترکہ کمان نشانہ بنانے کی کارروائیوں میں اعلی ترین معیارات کو نافذ کرنے اور عسکری کارروائیوں میں بین الاقوامی اور انسانی قانون کے بنیادی اصولوں کی پاسداری کرتی ہے ... اور حادثات کے وقوع سے متعلق تمام تر اقدامات کرتی ہے تا کہ ذمے داری اور شفافیت کے اعلی ترین درجوں کو یقینی بنایا جا سکے۔