.

اقوام متحدہ کی سعودی عرب پر حوثیوں کے میزائل حملے کی شدید مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے حوثی باغیوں کی طرف سے سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض پر میزائل حملے کی کوشش پر عالمی سطح پر مذمت کا سلسلہ جاری ہے۔

عرب ممالک اور یورپی یونین کی جانب سے سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض میں حوثیوں کے میزائل حملے کی مذمت کے بعد اقوام متحدہ نے بھی اس حملے کوبزدلانہ اور امن کے قیام کے لیے ہونے والی کوششوں کو تباہ کرنے کے مترادف قرار دیا۔

منگل کو اقوام متحدہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کلہ حوثی ملیشیا کی طرف سے سعودی عرب پر میزائل حملہ ناقابل قبول ہے۔ بیان میں حوثیوں سے بین الاقوامی قوانی کی پابندی کرنے پر زور دیا گیا۔

خیال رہےکہ سوموار کے روز یورپی یونین نے بھی سعودی عرب پر حوثیوں کے میزائل حملے کو غیرقانونی اور قابل مذمت قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی تھی۔ یورپی یونین کا کہنا تھا کہ سعودی عرب پر حملے ناقابل قبول ہیں۔ انہیں فوری طور پرروکا جانا چاہیے۔

قبل ازیں جرمنی، فرانس اور برطانیہ نے سعودی عرب پر ہفتے کے روز حوثیوں کے میزائل حملے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے حوثیوں سے اشتعال انگیزی پھیلانے سے باز رہنے پر زور دیا تھا۔

خیال رہے کہ ہفتے کے روز ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغیوں‌نے سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض پر ایک مزائل حملہ کیا تھا تاہم عرب اتحاد اور سعودی محکمہ دفاع نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے میزائل کو فضا ہی میں تباہ کردیا تھا۔

اس میزائل حملے پر عرب ممالک کی طرف سے سخت رد عمل کا اظہار کیا گیا۔ مصر، اردن، قطر، متحدہ عرب امارات بحرین اور دووسرے ممالک نے حوثیوں کے حملے کو بزدلانہ اور ناقابل قبول قرار دیتے ہوئے سعودی عرب کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کیا تھا۔