.
یمن اور حوثی

افسوس ناک تصاویر : حوثیوں کے زیر کنٹرول مساجد میں نشہ آور بوٹی 'قات' کا استعمال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وزیر اطلاعات معمر الاریانی نے آج بدھ کے روز اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر حوثی ملیشیا کے زیر کنٹرول علاقوں میں مساجد کے تقدس کی پامالی سے متعلق تصاویر جاری کی ہیں۔ تصاویر سے اندازہ ہوتا ہے کہ باغیوں نے مساجد کو نشہ آور بوٹی "قات" استعمال کرنے کا اڈہ بنا دیا ہے۔

تصاویر میں حوثیوں کو متعدد مساجد کے اندر 'قات' (بوٹی) کھاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

یمنی وزیر نے اپنی سلسلہ وار ٹویٹس میں بتایا کہ "ایران نواز حوثی ملیشیا کے زیر کنٹرول علاقوں میں مساجد کو قات تناول فرمانے کی مجلسوں میں تبدیل کر دیا گیا ہے جب کہ مساجد کے منبروں کو ایسی اسکرینوں میں بدل دیا گیا ہے جہاں سے حوثی ملیشیا کے سربراہ عبدالملک الحوثی کی تقاریر نشر ہوتی رہتی ہیں۔ ان میں وہ ایران سے درآمد شدہ زہریلے افکار پھیلاتا ہے۔

الاریانی کے مطابق حوثی ملیشیا کی کارستانیوں کی تاریخ مساجد کو دھماکوں سے اڑانے، نفرت انگیز نعرے پھیلانے کے اڈوں میں تبدیل کرنے، مخالفین کے لیے قید خانے بنانے اور اسلحہ و گولہ بارود اکٹھا کرنے سے بھری پڑی ہے۔

یمنی وزیر اطلاعات نے زور دے کر کہا کہ حوثیوں کا اسلحے کے زور پر اپنے شدت پسند افکار کو پھیلانا ،،، یمن کی معاشرتی اور قومی مربوطیت کے لیے سنگین خطرہ ہے۔ مزید یہ کہ انسانی حقوق کے عالمی اعلامیے اور شہری اور سیاسی حقوق سے متعلق بین الاقوامی معاہدے کی کھلی خلاف ورزی ہے۔