.

امریکا لبنان کودرپیش بحرانوں پرقابو پانے میں مدد دے: اردن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اردن کے وزیر خارجہ نے اپنے لبنانی ہم منصب کو آگاہ کیا ہے کہ اردن کے وفد نے واشنگٹن کے حالیہ دورے کے موقع پراعلیٰ امریکی حکام سے بات چیت میں انھیں کہا ہے کہ وہ لبنان کواس کے بحرانوں سے نکالنے میں مدددیں۔

وزیرخارجہ نے اردن کے شاہ عبداللہ دوم کے لبنان کی حمایت کے فیصلے کی توثیق کی۔لبنان کے وزیرخارجہ و تارکینِ وطن ڈاکٹرعبداللہ بوحبیب سے ان کے اردنی ہم منصب ایمن صفدی نے فون پر بات چیت کی ہے اورانھیں نیا منصب سنبھالنے پرمبارک باد پیش کی ہے۔

اردنی وزیر نے لبنان کے لیے اپنے ملک کی حمایت اور دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون پر زور دیا۔

برطانوی خبررساں ایجنسی رائٹرز نے گذشتہ بدھ کو خبر دی تھی کہ مصر، اردن، شام اور لبنان کے وزرائے توانائی نے لبنان کو ایندھن اور بجلی کے جاری بحران پر قابو پانے میں مدد دینے کے لیے قدرتی گیس مہیا کرنے کے لائحہ عمل کی منظوری دی ہے۔

ان ممالک کے اردن میں منعقدہ ایک اجلاس میں مصر کے وزیر پٹرولیم نے کہا تھاکہ انھیں لبنان کو ایندھن مہیا کرنے کے لیے گیس کی ترسیل کے بنیادی ڈھانچے کی تزئین نو کی ضرورت پیش آسکتی ہے اوروہ امید کرتے ہیں کہ وہ اسے جلد گیس برآمد کریں گے۔

بیروت میں متعیّن امریکی سفیرنے گذشتہ ماہ العربیہ انگلش کو بتایا تھا کہ ان کا ملک عالمی بنک،مصر اور اردن کی حکومتوں کے ساتھ بات چیت کررہا ہے تاکہ لبنان کی ایندھن اور توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کاحل تلاش کرنے میں مدد مل سکے۔

انھوں نے کہا کہ ’’میں لبنانی عوام کو درپیش مسئلہ کے حل کی تلاش کی کوشش کررہا ہوں۔ ہم مصر،اردن کی حکومتوں اورعالمی بنک سے اس ضمن میں بات کررہے ہیں۔‘‘انھوں نے مزیدکہاکہ ہم لبنان کی ایندھن اور توانائی کی ضروریات کے حقیقی اور پائیدار حل کی کوشش کر رہے ہیں۔