.

حزب اللہ نے لبنانیوں کے مصائب میں اضافہ کیا:امریکی محکمہ خارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی محکمہ خارجہ کی علاقائی ترجمان جیرالڈائن گریفتھس نے کہاہے کہ حزب اللہ کی سرگرمیوں سے لبنانی عوام کے مصائب میں اضافہ ہوا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ حزب اللہ ایک دہشت گرد تنظیم ہے۔

انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ ایران کی حمایت یافتہ جماعت ملک کے بحرانوں میں اضافے کی ایک اہم وجہ ہے۔

تہران کے مفادات

امریکی محکمہ خارجہ کے عہدیدار نے آج بدھ کے روز مقامی الجمہوریہ اخبار کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ دُنیا کی جانب سےحزب اللہ کی حقیقت کو تسلیم کرنے میں روز بروز اضافہ ہو رہا ہے۔ یہ لبنان کی محافظ نہیں ہےجیسا کہ اس کا دعویٰ ہے بلکہ یہ ایک دہشت گرد تنظیم ہے۔ جس کی سرگرمیاں دہشت گردی پر مبنی ہیں۔ یہ گروپ ایران کے مذموم ایجنڈے کو آگے بڑھانانے، لبنان کی سلامتی، استحکام اور خودمختاری کو خطرات سے دوچار کررہی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ میں سمجھتا ہوں حزب اللہ لبنانی عوام کے مفادات سے زیادہ اپنے مفادات اور اپنے سرپرست ایران کے مفادات کے زیادہ فکر مند ہے۔

کرپشن کرنے والوں کا احتساب

جہاں تک امریکی انتظامیہ کی طرف سے لبنانی تاجروں اور سیاست دانوں پر عائد حالیہ پابندیوں کا تعلق ہے جیرالڈائن نے کہا کہ تین لبنانیوں پر پابندیاں اندھا دھند عاید نہیں کی گئیں بلکہ ثبوت اور ٹھوس شواہد کی بنیاد پر عاید کی گئی ہیں۔

انہوں نے لبنانی حکومت اور حکام سے مُطالبہ کیا کہ وہ بدعنوانوں کا احتساب کریں، کیونکہ لبنانی شہری اس بدعنوانی سے سب سے زیادہ متاثر ہیں۔