مآرب: الکسارہ کے محاذ پر حوثیوں کا بڑا حملہ پسپا، 30 باغی ہلاک اور 8 قید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن کے صوبے مآرب میں شدید لڑائی کا سلسلہ جاری ہے۔ اس دوران میں یمنی فوج اور عوامی مزاحمت کاروں نے صوبے کے مغربی حصے میں الکسارہ کے محاذ پر حوثی ملیشیا کا ایک بڑا حملہ ناکام بنا دیا۔

العربيہ / الحدث نیوز چینلوں کے نمائندے کے مطابق زمنی ذرائع نے ہفتے کے روز بتایا کہ 8 گھنٹوں تک جاری رہنے والی بم باری اور جھڑپوں میں ایران نواز حوثی ملیشیا کے 30 ارکان ہلاک ہو گئے اور 7 قیدی بنا لیے گئے۔

یمنی فوج اور عوامی مزاحمت کار قبائلی افراد کے ساتھ مل کر کئی ہفتوں سے مارب کے مختلف محاذوں پر شدید معرکوں میں مصروف ہیں۔ ان معرکوں میں حوثیوں کو بھاری جانی و مادی نقصان پہنچا ہے۔

حوثی ملیشیا نے جمعرات کے روز "الحمّہ" پناہ گزین کیمپ کو دو بیلسٹک میزائلوں کے ذریعے نشانہ بنایا تھا۔ مارب شہر کے نواح میں واقع کیمپ کو بین الاقوامی تنظیم برائے ہجرت (IOM) چلا رہی ہے۔

رواں سال کے اوائل سے حوثیوں نے تیل کی دولت سے مالا مال مارب صوبے کو نشانہ بنانے کی کارروائیوں میں اضافہ کر دیا۔ ان کارروائیوں میزائل اور ڈرون طیاروں کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ اس کے نتیجے میں سیکڑوں شہری جاں بحق اور زخمی ہو چکے ہیں۔

عالمی برادری اور اقوام متحدہ کی جانب سے کئی بار مطالبہ کیا جا چکا ہے کہ مارب میں ان حملوں کو روکا جائے۔ ان حملوں سے لاکھوں افراد کی زندگی کو خطرہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں