ایرانی ملیشیا

اسرائیل کا مغربی شخصیات کے قتل کی ایرانی سازش ناکام بنانے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی عہدیداروں کے مطابق اسرائیلی خفیہ ادارے ’موساد‘ نے حال ہی میں ایرانی "قدس فورس" کےبیرون ملک اہم شخصیات کے قتل کی سازشوں کو ناکام بنا یا ہے۔ اسرائیلی عہدیداروں کے مطابق تین مغربی اور اسرائیلی شخصیات کو ترکی ، جرمنی اور فرانس میں حملوں کا نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کی گئی تھی۔

اسرائیلی حکام نے بتایا کہ تُرکی کے شہر استنبول میں اسرائیلی قونصل خانے کے ایک ملازم ، جرمنی میں ایک سینیرامریکی جنرل اور فرانس میں ایک صحافی کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی۔ اخبار "یدیعوت احرونوت" اور اسرائیلی نشریاتی اتھارٹی "کان" نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی ذرائع نے زور دے کر کہا کہ اس آپریشن کی ناکامی کے پیچھے "موساد" کا کردار ہے۔

ایرانی اپوزیشن کی ویب سائٹ "ایران انٹرنیشنل" کے ذریعہ شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق اسرائیلی دعوے میں کہا ہے کہ ایران نے ترکی کے اسرائیلی قونصل خانے میں ایک سفارت کار کو قتل کرنے کی کوشش کی ہے۔ مبینہ طورپر کی جانے والی یہ منصوبہ بندی ایران کے پاسداران انقلاب کی سمندر پار کارروائیوں کی ذمہ دار" قدس فورس کی یونٹ 840 کے ذریعے انجام دی جانا تھی۔

اس رپورٹ کے مطابق ایرانی عنصر ایک خفیہ آپریشنل یونٹ میں کام کر رہا تھا۔ اس یونٹ کے ذمہ ایران سے باہر دہشت گردی کے بنیادی ڈھانچے کی منصوبہ بندی اور ڈھانچے کا قیام شامل ہے۔ اس رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ استنبول میں قتل کے مشن کے حوالے کرنے والے ایرانی عنصر نے جرمنی میں ایک بڑے امریکی جنرل اور فرانس میں ایک صحافی کے قتل کو بھی انجام دینے کی تیاری کی تھی۔ تاہم موساد کی کوششوں سے ملزم کی نشاندہی کی گئی اور اسے یورپ کے ایک ملک میں گرفتار کیا گیا ہے۔

اس رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ گرفتار ایرانی ایجنٹ نے اپنی تفتیش کے دوران اعتراف کیا کہ اسے قتل کی تیاری کے لئے ڈیڑھ لاکھ ڈالر موصول ہوئے۔اس کے علاوہ مقامی منشیات فروشوں کی مدد سے اپنے منصوبے کو انجام دینے کے بعد اضافی ملین ڈالر ملنا تھے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب ایرانیوں نے دنیا بھر کے اسرائیلی عہدیداروں اور خاص طور پر استنبول میں اسرائیلی عہدیداروں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی ہے۔

دو ماہ قبل اسرائیلی سرکاری نشریاتی تنظیم "کان" نے اعلان کیا تھا کہ ترکی اور اسرائیلی انٹلیجنس نے اسرائیلی بزنس مین یائر گیلر کے قتل کی کوشش ناکام بنا دی۔ اسے سنہ 2020 میں ایرانی جوہری سائنسدان محسن فخری زادہ کے قتل کے رد عمل میں ہلاک کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔

گیلر نے کہا کہ مُجھے بتایا گیا کہ ایرانی میرا پپچھا کر رہے ییں۔ مجھے خوشی ہے کہ اس ڈویژن کو گرفتار کرلیا گیا ، اور میں نے ہر ایک کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے میرے تحفظ کی خاطر اقدامات کیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں