ڈنمارک میں ایک ارب ستر کروڑ ڈالر کے ٹیکس فراڈ کا ملزم دبئی میں گرفتار

ڈینش حکومت کی طرف سے دبئی پولیس کی تحسین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

دبئی پولیس نے جمعہ کے روز ڈنمارک میں ایک بڑے فراڈ کے مقدمے میں مطلوب ایسے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے، جس نے ڈنمارک حکومت کے خزانے کو ایک ارب ستر کروڑ ڈالر کا نقصان پہنچایا تھا اور جعلسازی سے خطیر رقم ٹیکس ریفنڈ کے نام سے حاصل کر کے ڈنمارک سے رفو چکر ہو گیا تھا۔

مقامی پولیس نے اسے تین جون کو ایک کامیاب چھاپے کے بعد گرفتار کر لیا ہے۔ گرفتار کیے گئے ملزم کا نام سنجے شاہ بتایا ہے ڈنمارک کی وزارت انصاف کے مطابق گزشتہ سات سال سے یہ ملزم ڈینش عدالت کو مطلوب تھا۔ مگر قابو نہیں آ رہا تھا۔ فراڈ کرنے کے بعد وہ ڈنمارک سے فرار ہو گیا تھا۔

اس بڑے فراڈ میں ملوث ملزم کی گرفتاری پر ڈنمارک کی وزارت انصاف اور وزارت خارجہ نے دبئی پولیس کو زبردست خراج تحسین پیش کیا ہے۔ وزیر انصاف ڈنمارک نے کہا ہے کہ ہمیں یقین تھا کہ ایسا فراڈ کر کے بھاگنے والا شخص متحدہ عرب امارات میں قانون کے شکنجے سے بچ نہیں سکے گا۔

سنجے شاہ نے البتہ دبئی پولیس کے ہاتھوں اپنی گرفتاری کے بعد خود کو بے گناہ ظاہر کرنے کی کوشش کی ہے، تاہم اس کی طرف سے ابھی کسی مقامی وکیل کے سامنے آنے کی اطلاع ہے اور نہ ہی مقامی عدالت میں اسے پیش کرنے کے حوالے سے کوئی تاریخ طے ہوئی ہے۔

واضح رہے متحدہ عرب امارات اور ڈنمارک کے درمیان ملزمان کی ھوالگی کے معاہدے پر رواں سال ماہ مارچ میں دستخط ہوئے ہیں اور لگ بھگ اڑھائی ماہ کے مختصر وقت میں دبئی پولیس نے ڈنمارک کو مطلوب ایک اہم ملزم کی گرفتاری ممکن بنا لی ہے۔

دبئی پولیس کے بریگیڈئیر جنرل جمال الجلاف نے اس بارے میں اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ملزم نے بین الاقوامی بزنس کمپنیوں کے حوالے سے ڈنمارک میں ٹیکس ریفنڈ کے طور پر جعلسازی سے ایک ارب ستر کروڑ ڈالرز کا فراڈ کیا تھا اور جعلسازی سے ڈینش خزانے کو بھاری نقصان پہنچایا تھا۔ حالانکہ وہ ٹیکس ریفنڈ کے نام سے یہ رقم حاصل کرنے کا جواز نہ رکھتا تھا۔

ڈنمارک میں یہ فراڈ سکینڈل '' کم اینڈ ایکس ٹریڈنگ '' کےنام سے مشہور ہے ، جس میں ہزاروں لوگوں نے بین الاقوامی بزنس کمپنیوں کے حوالے سے اس نوعیت کی درخواستیں دیں تھیں۔ بریگیڈئیر جنرل جمال الجلاف کے مطابق دوبئی پولیس نے ملزم کی گرفتاری بین الاقوامی پولیس وارنٹ کے تحت کی ہے جس کے لیے ڈنمارک انٹرپول کے ذریعے رابطہ کیا تھا۔

ادھر ڈنمارک حکومت اس ملزم کی گرفتاری پر خوش ہے کہ جسے وہ دوہزار پندرہ سے گرفتار کر کے عدالتی کٹہرے میں نہ لا سکی تھی دبئی پولیس نے بہت تھوڑے وقت میں اس پکڑ لیا ہے ۔ اب اس ملزم کے ڈنمارک پہنچنے کے پر اس کے خلاف ڈنمارک کی عدالت میں باضابطہ مقدمہ چلنے کا امکان ہے۔ تاہم اس سے پہلے متحدہ عرب امارات میں ضروری قانونی عمل مکمل کیا جائے گا اس کے بعد ہی ملزم کو ڈینش حکام کے حوالے کر کے ڈنمارک روانہ کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں