.

لبنان کی حمایت جاری رکھیں گے: سعودی عرب، امریکہ اور فرانس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اجلاس کے موقع پر سعودی عرب، امریکہ اور فرانس کے نمائندوں نے ملاقات کی۔ ملاقات کے بعد تینوں ملکوں نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ لبنان کی حمایت جاری رہے گی۔ اس چھوٹے ملک کے تحفظ اور استحکام کیلئے کام کرتے رہیں گے ۔

بیان میں کہا گیا کہ لبنان میں وقت پر الیکشن ہونا انتہائی اہم ہے۔ یاد رہے ان دنوں لبنانی پارلیمان نئے صدر کے انتخاب کی تیاری کر رہی ہے۔

سعودیہ، امریکہ اور فرانس نے مزید کہا کہ منتخب لبنانی صدر کیلئے ضروری ہے کہ وہ ملک کے موجودہ بحران پر قابو پانے کیلئے علاقائی اور عالمی طاقتوں کے ساتھ مل کر کام کرے۔

لبنانی فوج کیلئے اہم کردار کا اقرار

تینوں ملکوں نے کہا لبنان میں ایسی حکومت کی تشکیل ضروری ہے جو سیاسی اور اقتصادی بحرانوں کا مقابلہ کرنے کیلئے مطلوبہ معیشت اور ساخت کی اصلاحات نافذ کر سکے۔ بالخصوص آئی ایم ایف جیسے عالمی ادارے کیساتھ معاہدے تک پہنچنے کیلئے درکار اصلاحات لائی جا سکیں۔

سعودیہ، امریکہ اور فرانس نے کہا لبنان کے استحکام، سلامتی اور خوشحالی کیلئے اس کے ساتھ ملکر کام کرنے کیلئے تیار ہیں۔ تینوں ملکوں نے کہا لبنان کے اندرونی استحکام اور خودمختاری کو یقینی بنانے کیلئے طاقتور فوج اور داخلی سلامتی کے اداروں کا کردار بھی تسلیم کرنا ہوگا۔

جاری بیان میں زور دیا گیا کہ نئی لبنانی حکومت کیلئے ضروری ہے کہ وہ اقوام متحدہ کی قرار دادوں اور دیگر متعلقہ عالمی قراردادوں پر عملدرآمد یقینی بنائے۔ اسی طرح عرب لیگ کی ان قرار دادوں پر بھی عمل کیا جائے جو طائف معاہدے کے تحت لبنان میں اتحاد اور قومی سلامتی کے تحفظ کو یقینی بنانے کی بات کرتا ہے۔

بدترین اقتصادی بحران

لبنان میں 2019 کے بعد سے بڑی اقتصادی تباہی کا مشاہدہ کیا گیا ہے۔ اس معاشی زوال کو ورلڈ بنک نے گزشتہ صدی کے وسط کے بعد کا سب سے بدترین بحران قرار دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں