بغداد میں ’’سٹار بکس ‘‘ کافی کی بغیر لائسنس شاپس کیسے کھل گئیں؟

عمارت کے سامنے کے باہر لٹکائے ہوئے لوگو سے لے کر کپ اور نیپکن تک اصل کمپنی کاا ستعمال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بغداد میں اچانک بغیر کسی منظوری کے عالمی برانڈ ’’سٹار بکس‘‘ کافی کی شاپ کھل گئی جس نے عراقیوں کو حیران کردیا۔ یہ دکان کسی بھی دوسرے ملک میں لائسنس یافتہ بنیادی کافی شاپ کی تمام خصوصیات رکھتی ہے۔ نئی کھلنے والی اس کافی شاپ میں اصل کمپنی کی ساکھ اور تصدیق کی تمام علامات موجود ہیں۔ عمارت کے اگلے حصے کے باہر لٹکائے ہوئے لوگو سے شروع ہو کر کپ اور نیپکن تک سب کچھ باضابطہ شاپ کی مانند ہے۔

تاہم ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق تصدیق کی گئی تو معلوم ہوا کہ بغداد کے قلب میں واقع نئے کیفے کے پاس کوئی لائسنس نہیں ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بغداد میں ایسے تین کیفے ہیں اور ان میں جو کچھ فروخت کے لیے پیش کیا جاتا ہے وہ پڑوسی ممالک سے "سٹاربکس" کیفے سے درآمد کیا جاتا ہے اور یہ کیفے غیر قانونی طور پر چلائے جاتے ہیں۔

ملیشیاؤں سے تعلقات؟!

کمپنی نے اپنے ٹریڈ مارک کی خلاف ورزیوں کو روکنے کی کوشش کرنے کے لیے مقدمہ دائر کیا تھا لیکن مقدمہ معطل کر دیا گیا۔

دوسری طرف امریکی حکام اور عراقی قانونی ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ دکاندار نے ان کے کہنے کے مطابق "ملیشیاؤں اور طاقتور سیاسی شخصیات" کے ساتھ اپنے تعلقات پر فخر کرتے ہوئے انہیں خبردار کیا تھا۔

بدھ کے روز، سٹار بکس کے ترجمان نے ایجنسی کو بتایا کہ کمپنی اس حوالے سے مزید اقدامات کا جائزہ لے رہی ہے۔ کمپنی اپنی دانشورانہ املاک کی خلاف ورزی روکنے اور اپنے خصوصی حقوق کے تحفظ کا عزم رکھتی ہے۔

عراقی معیشت مشکل میں

خلاف ورزیوں سے متاثر ہونے والی کمپنیوں اور ان مقدمات کی پیروی کرنے والے امریکی حکام کے مطابق معروف ٹریڈ مارک کی جعل سازی سے جعل ساز خطرے میں پڑ جاتا ہے، دوسر ی طرف کمپنی کو اس سے بڑے پیمانے پر نقصان ہوتا ہے۔

یہ ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب عراق اپنی تیل پر مبنی معیشت سے ہٹ کر بیرونی سرمایہ کاری کا خواہاں ہے، بالخصوص ان مشکل معاشی حالات کے ساتھ جن سے وہ برسوں سے گزر رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں