فلسطین اسرائیل تنازع

شمالی غزہ میں اسرائیلی بمباری ، عالمی ادارہ صحت نے ادویات کی فراہمی روک دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عالمی ادارہ صحت نے یہ افسوسناک اعلان کیا ہے کہ وہ شمالی غزہ مسلسل اسرائیلی بمباری اور دوسری رکاوٹوں کے باعث غزہ میں زخمیوں اور بے گھر افراد کے لیے ادویات کی فراہمی جاری رکھنے سے قاصر ہوگیا ہے۔ اس لیے اس نے مجبوراً اپنی طبی امدادی کاروائیاں منسوخ کردی ہیں۔

دو ہفتوں سے بھی کم مدت میں ایسا چوتھی بار ہوا ہے کہ عالمی ادارہ صحت کو غزہ میں اسرائیلی عدم تعاون، بمباری اور بے رحمی کی وجہ سے امدادی کارروائیوں کو جاری رکھنے سے انکار کرنا پڑا ہے۔ یہ اعلان پہلی دفعہ عالمی ادارہ صحت نے 26 دسمبر 2023ء کو کیا تھا۔

عالمی ادارہ صحت نے یہ بیان سوشل میڈیا پلیٹ فارم 'ایکس' پر جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اب تک اس بات کو 12 دن ہوچکے ہیں کہ ہم شمالی غزہ پہنچنے میں ناکام رہے ہیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اس افسوسناک فیصلے کی وجہ اسرائیل کی طرف سے بھاری بمباری، نقل و حرکت میں رکاوٹوں اور 'ڈبلیو ایچ او' سے عدم تعاون کی وجہ سے گیا ہے۔ ان تمام رکاوٹوں کے باعث غزہ میں خصوصاً شمالی غزہ میں ادویات کی فراہمی تقریبا نا ممکن بن چکی تھی۔

ادویات فراہمی کے منصوبے کے تحت یہ ادویات پانچ ہسپتالوں کو منتقل کی جانے تھی۔

ڈی جی عالمی ادارہ صحت ٹیدروس اذانوس گیبرئیس نے کہا کہ وہ اس شمالی غزہ میں طبی سہولیات کی شدید قلت اور بد ترین تباہی پر صدمے سے دوچار ہیں۔ انہوں نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم 'ایکس' پر جاری کردہ بیان میں کہا ہے ادویات کی فراہمی میں مزید تاخیر کا ہونا فلسطینیوں کی اموات اور مشکلات میں مزید اضافے کا باعث بنے گا۔ اس صورتحال کی تمام تر سنگینی کے باوجود اسرائیلی عدم تعاون اور بمباری کے بعد غزہ کے جنگ زدہ لوگوں کے لیے 'ڈبلیو ایچ او' نے اپنی خدمات کو روک دیا ہے۔

بین الاقوامی ریسکیو کمیٹی ایڈ گروپ نے اپنے ایک الگ بیان میں کہا ہے کہ 'اس کی ہنگامی حالات میں کام کرنے والی میڈیکل ٹیم اور فلسطینیوں کے لیے طبی خیراتی امداد کو بھی زبردستی روکنے کا کہا گیا ہے کہ وہ اپنی خدمات کو ترک کردیں اور الاقصیٰ ہسپتال میں بھی اپنی امدادی سرگرمیوں کو روک دیں۔ بتایا گیا کہ اس طبی امدادی گروپ کو اطلاع دی گئی ہے کہ اس علاقے میں اسرائیلی فوج کی سرگرمیاں پھر بڑھنے والی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں