اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے میں مزید پانچ فلسطینی فنا کے گھاٹ اتار دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی فوج نے مقبوضہ مغربی کنارے بشمول رام اللہ میں حملے کر کے اتوار کے روز کم از کم پانچ فلسطینیوں کو موت سے ہم کنار کر دیا ہے۔ دو کار سوار فلسطینیوں کو اس وقت فائرنگ کر کے اسرائیلی اہلکاروں نے ہلاک کیا جب ان کی کار ایک چیک پوسٹ کے پاس سے گذری۔

اسرائیلی فوج نے اس واقعے کے بارے میں ایک بیان میں بتایا ہے کہ فوجیوں نے کار پر سوار دو دہشت گردوں کا پیچھا کیا اور الخلیل شہر کے نزدیک انہیں فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا گیا۔

دوسری جانب فلسطینی وزارت صحت نے رام اللہ سے تصدیق کی ہے کہ ان افراد کو ہلاک کیا گیا ہے۔ فلسطینی ہلال احمر نے بھی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے ہلاک کیے گئے افراد کی لاشیں موصول ہو گئی ہیں۔

اتوار کی رات ہی وزارت صحت نے دو نوجوان فلسطینیوں کی مزید ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔ یہ دوسرا واقعہ رام اللہ کے نزدیک پیش آیا ہے، جس میں فوجیوں نے ہی ان نوجوانوں کو نشانہ بنایا۔

اس واقعے کے بارے میں اسرائیلی فوج نے اپنے موقف میں کہا ' نوجوانوں نے ایک فوجی اڈے پر سپاہیوں پر بارود پھینکا تھا۔ جس کے بعد انہیں ہلاک کر دیا گیا۔ تاہم اسرائیلی فوجیوں کے بارود سے زخمی یا ہلاک ہونے کی کوئی اطلاع نہیں دی گئی۔

مقبوضہ مغربی کنارے میں اتوار ہی کے روز فلسطینی وزارت صحت نے اریحا شہر کے نزدیک پناہ گزین کیمپ میں ایک نوجوان فلسطینی کی ہلاکت کی تصدیق کی۔ اریحا میں موجود طبی ذرائع نے بتایا 16 سالہ فلسطینی نوجوان کو ایک فوجی حملے کے دوران ہلاک کیا گیا۔

پناہ گزین کیمپ پر یہ فوجی حملہ ایک مطلوب فلسطینی شہری کو گرفتار کرنے کے لیے کیا گیا تھا، تاہم بغیر کسی مزاحمت یا تصادم کے اس سولہ سالہ نوجوان کو گولی مار دی گئی۔ اس واقعے پر اسرائیلی فوج نے فوری طور پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔

واضح رہے سات اکتوبر 2023 کے بعد سے مقبوضہ مغربی کنارے میں اب تک 343 فلسطینی جاں بحق کیے جا چکے ہیں۔ جبکہ پچھلے سال بھر میں مجموعی طور پر 520 فلسطینیوں کو جاں بحق کیا گیا ہے۔

اس کے مقابلے میں اسرائیل میں داخلی سلامتی کے نگران ادارے ' شین بیت ' کے مطابق مقبوضہ مغربی کنارے میں سال 2023 کے دوران 41 اسرائیلی بھی مختلف واقعات میں مارے گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں