داعش کے ہاتھوں زندہ جلائے گئے اردنی پائلٹ کے بارے میں بغدادی کی اہلیہ کا موقف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ابو بکر البغدادی کی اہلیہ اسماء محمد نے العربیہ کو دیے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں داعش کی جانب سے اردنی پائلٹ معاذ الکساسبہ کو جلا کر قتل کرنے کے پس پردہ انکشافات کیے ہیں۔

العربیہ چینل سے پہلی بار بات کرتے ہوئے اسماء محمد نے کہا کہ وہ قطعی طور پر نہیں جانتی کہ اردنی پائلٹ کو جلانے کا فیصلہ کس نے کیا۔ یہ معلوم نہیں کہ آیا یہ فیصلہ البغدادی یا تنظیم کے سربراہ ابو محمد العدنانی نے کیا تھا۔

"ناگوار منظر"

اس نے اس بات کی نشاندہی کی کہ’’جلنے کا منظر تکلیف دہ تھا۔ اس کا کوئی جواز نہیں تھا۔ اس حوالے سے تنظیم کا جواز بالکل بھی قابل قبول نہیں تھا۔"

البغدادی کی اہلیہ نے پچھلی دہائی کے دوران دنیا کے خطرناک ترین آدمی کے بارے میں تفصیلات اور رازوں کے بارے میں بھی بات کی۔ اس کے "مبینہ ریاست" کے کنٹرول کا دائرہ وسیع ہونے کے بعد وہ مغرور ہو گیا تھا۔

"عورتوں کے ساتھ جنون"

اسماء محمد نے تنظیم کے رہ نماؤں کے خواتین کے ساتھ جنون کا انکشاف کیا اور کہا کہ البغدادی کے پاس 10 سے زیادہ یزیدی "لونڈیاں " تھیں۔ تاہم اسماء کے مطابق البغدادی نے ان کے ساتھ حسن سلوک کیا۔

اس نے بتایا کہ البغدادی نے ایک 13 سالہ عراقی لڑکی سے شادی کی جو عمر میں ان کی بیٹیوں جیسی تھی۔

ویڈیو جس نے دنیا کو ہلا کر رکھ دیا

قابل ذکر ہے کہ اردنی پائلٹ معاذ الکساسبہ کا F-16 لڑاکا طیارہ اس وقت گر کر تباہ ہو گیا تھا جب وہ شمالی شام میں رقہ گورنری میں دہشت گرد تنظیم کے ٹھکانوں پر فوجی مشن انجام دے رہا تھا۔

داعش نے اس کے پایلٹ معاذ الکساسبہ کو پکڑ لیا۔ جب کہ اردن نے قیدیوں کے تبادلے کے معاہدے میں اسے رہا کرنے کی کوشش کی۔ فروری 2015ء میں تنظیم نے ایک ویڈیو نشر کی جس میں پائلٹ کو زندہ جلاتے ہوئے دکھایا گیا۔ یہ ایک دہشت گردانہ جرم تھا جس کی پوری دنیا نے مذمت کی تھی۔

قابل ذکر ہے کہ داعش کے رہ نما نے 2014 میں عراق اور شام کے بڑے علاقوں پر کنٹرول حاصل کرکے اس پر اپنی مزعومہ خلافت قائم کی تھی۔ اکتوبر 2019ء میں ادلب گورنری میں امریکہ کی جانب سے خصوصی آپریشن میں البغدادی کی ہلاکت س اس کی خلافت بھی ختم ہوگئی۔ اس وقت امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا تھا کہ امریکی افواج کے ایک کمانڈو اسکواڈ نے البغدادی کو دیکھا اور اس کا تعاقب کیا لیکن البغدادی نے اپنی دو بیویوں اور بیٹے کے ساتھ خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں