سونےکی تجارت کو خفیہ رکھنے پر یمنی اور ایک سعودی کو 14 سال قید کی سزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی وزارت تجارت نے ایک سعودی شہری اور چار یمنی باشندوں کے خلاف ہتک عزت کا حکم جاری کیا، جب کہ مدینہ منورہ میں فوجداری عدالت کی طرف سے ان کے خلاف حتمی عدالتی حکم جاری کیا گیا۔ ان پر سونے اور زیورات کے شعبے میں تجارتی سرگرمیوں کوخفیہ رکھنے اور مدینہ اور نجران کے علاقوں میں دو مقامات پر خفیہ تجارتی سرگرمیوں کا الزام عاید کیا گیا تھا۔

مجرموں کو مجموعی طور پر 14 سال قید کی سزا سنائی گئی۔ ان میں ایک سعودی شہری کو خفیہ تجارتی سرگرمیوں پر 3 سال قید۔ اور تین یمنی باشندوں کو تین تین سال قید کی سزا سنائی گئی۔ اس کے علاوہ جرم میں حصہ لینے اور غیر قانونی مالی آمدنی کی نگرانی کے جرم میں دو سال قید کی سزا سنائی گئی۔

سزا میں جرم کے نتیجے میں فنڈز اور رقم کی ضبطی بھی شامل ہے، جس کی مالیت چھ ملین ریال سے تجاوز کر گئی، جس میں نقدی اور بینک بیلنس، تقریباً 28 کلو سونا ایک نجی ٹرانسپورٹ گاڑی اور ایک اسمارٹ فون شامل ہیں۔

ملزمان کو ایک لاکھ ریال جرمانے کے علاوہ عمارتوں میں خفیہ سرگرمی کو ختم کرنے، کمرشل رجسٹری کی منسوخی، لائسنس کی منسوخی، سعودی شہری کو 5 سال تک تجارتی سرگرمی سے روکنے، زکوٰۃ، فیس اور ٹیکس کی وصولی اور حکم کے نفاذ کے بعد غیرملکی ملزمان کو ملک بدر کرنا شامل ہے۔

جاری کردہ حکم نامے کے مطابق یہ ثابت ہوا کہ خفیہ تجارتی سرگرمیوں میں ملوث شخص اپنی کمرشل رجسٹری کا استعمال کرتے ہوئے خفیہ افراد کو سونے اور زیورات کی تجارت میں ملوث تھا۔ متعلقہ حکام نے اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے شواہد حاصل کیے کہ وہ غیر قانونی طور پر اور بغیر کسی غیر ملکی تجارتی سرگرمی کو انجام دے رہے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں