رام اللہ میں اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے چار فلسطینی جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینی وزارت صحت نے بتایا ہے کہ مقبوضہ مغربی کنارے کے رام اللہ سے ملحقہ قصبے کفر نیما میں سوموار اور منگل کی درمیانی شب اسرائیلی فورسز کی فائرنگ سے چار افراد ہلاک ہو گئے۔

وزارت صحت نے کہا کہ اسرائیلی فورسزکی فائرنگ سے زخمی ہونے والے آٹھ افراد کو رام اللہ کے مغرب میں واقع گاؤں کفر نیما سے فلسطین میڈیکل کمپلیکس پہنچایا گیا ہے۔ ان میں بعض کی حالت تشویشناک بیان کی جاتی ہے۔

سکیورٹی ذرائع نے فلسطینی خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ اسرائیلی اسپیشل فورس نے کفر نیما گاؤں کے قریب ایک گاڑی پر گولیاں برسائیں جس سے متعدد شہری زخمی ہوگئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسرائیلی فورسز نے گاڑی پر گولی چلانے کے بعد گاؤں پر دھاوا بول دیا، جس سے تصادم شروع ہو گیا۔

رام اللہ اور البہرہ کے علاقے میں فتح تحریک نے چار افراد کی ہلاکت کے خلاف منگل کو رام اللہ اور البیرہ گورنری جامع ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔

اسرائیلی بارڈر پولیس نے کہا کہ اس نے ایک گاڑی پر فائرنگ کی جس نے ایک چھاپے کے دوران اس کے متعدد اہلکاروں کو کچلنے کی کوشش کی۔

بارڈر پولیس نے ایک بیان میں کہا کہ فورسز پیر کی صبح حملے کی کوشش میں مشتبہ افراد کو گرفتار کرنے کے لیے ایک عمارت پر چھاپہ مارا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ جیسے ہی فورس جائے وقوعہ کے قریب پہنچی تو چار مشتبہ افراد نے سکیورٹی اہلکاروں پرکار چڑھانے کی کوشش کی۔ اس پر فوج نے فائرنگ کرکے متعدد مشتبہ ملزمان کوگولیاں مار کر ہلاک کردیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں