پاکستان کو ایک ہی دن کرکٹ اور باکسنگ میں نمایاں کامیابیاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان نے لارڈز میں کھیلے گئے پہلے ٹیسٹ میچ میں انگلینڈ کو 75 رنز سے شکست دے دی ہے۔ لارڈز کے میدان پر پاکستان نے 20 سال بعد انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ میچ میں کامیابی حاصل کی ہے۔

پاکستان کے طے کردہ ہدف 283 رنز کے تعاقب میں انگلینڈ کی پوری ٹیم 207 رنز بناکر آل آؤٹ ہو گئی اور اس طرح پاکستانی ٹیم نے تاریخی کامیابی حاصل کی اور 4 میچوں کی سیریز میں ایک صفر سے برتری حاصل کرلی۔

خیال رہے کہ 6 سال قبل اسی گراؤنڈ پراسپاٹ فکسنگ کے باعث پاکستان کو شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا اور اب اسی تاریخی میدان پرشاہینوں نے انگلش ٹیم کا شکار کرکے پاکستانی پرچم سربلند کردیا۔

میچ کے بعد پاکستان ٹیسٹ ٹیم کے کپتان مصباح الحق لارڈز ٹیسٹ کی جیت معروف سماجی ورکر عبدالستار ایدھی مرحوم کے نام کر دی۔

میچ جیتنے کے بعد پاکستانی کھلاڑیوں نے لارڈز کے میدان میں پش اپس کے ذریعے پاک فوج کے ٹرینرز کو خراج تحسین بھی پیش کیا۔

پاکستان کے واحد پروفیشنل باکسر محمد وسیم نے فلپائن کے جیتھر الیوا کو شکست دے کر ورلڈ باکسنگ کونسل کا سلور فلائی ویٹ ٹائٹل جیت لیا۔

سیئول میں جاری ڈبلیو بی سی انٹرنیشنل سلور فلائی ویٹ ٹائٹل کیلئے ہونے والے مقابلے میں وسیم نے 12 مقابلوں کے بعد فتح اپنے نام کی۔

گزشتہ برس پروفیشنل باکسنگ شروع کرنے والے وسیم نے اپنے پروفیشنل کیریر کے آغاز سے پہلے امریکا اور جاپان میں بھی تربیت حاصل کی اور پاکستان کیلئے کامن ویلتھ گیمز میں بھی تمغہ حاصل کر چکے ہیں۔

سیئول میں آج 52 کلو گرام کے فلائی ویٹ کے مقابلے میں مجموعی طور پر بارہ رائونڈز کی فائیٹ ہوئی جس میں فتح نے وسیم کے قدم چومے۔

فائٹ سے قبل وسیم کے منیجر اینڈی کم نے کہا تھا کہ 28 سالہ باکسر اپنی زندگی کی سب سے اہم فائٹ کیلئے اس وقت اچھی فارم میں ہیں اور ٹائٹل جیتنے سے ان کے کیریئر میں بہت بڑی تبدیلی آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ وسیم بہترین فارم میں ہیں اور کورین باکسر ان کے قریب بھی نہیں۔

کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے وسیم اس سے قبل اپنی تینوں فائٹ میں حریف باکسرز کو ناک آؤٹ کر کے فتوحات اپنے نام کر چکے ہیں اور وہ 2014 کامن ویلتھ گیمز میں چاندی کا تمغہ بھی جیت چکے ہیں جبکہ 2010 کے ورلڈ کامبیٹ گیمز میں سونے کا تمغہ جیتا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں