.

علی بابا گروپ اور پاکستان کے درمیان مصنوعات کے فروغ کا سمجھوتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان اور چین کے بڑے کاروباری ادارے علی بابا گروپ ہولڈنگز لمیٹڈ کے درمیان ایک سمجھوتا طے پایا ہے جس کے تحت اول الذکر گروپ پاکستان کی ای کامرس (برقی تجارت) کے ذریعے چھوٹے اور درمیانے درجے کی برآمدات کے فروغ کے لیے کام کرے گا۔

علی بابا گروپ اور پاکستان کی ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی (ٹی ڈی اے پی) کے درمیان مفاہمت کی یادداشت پر وزیر تجارت خرم دستگیر اور علی بابا گروپ کے صدر مائیکل ایوانز اور گلوبل بزنس آنٹ فنانشیل کے سینیر نائب صدر ڈوگلس فیجین نےمنگل کے روز دستخط کیے ہیں۔

دست خطوں کی تقریب میں علی بابا گروپ کے ایگزیکٹو چئیرمین جیک ما اور وزیراعظم پاکستان میاں نواز شریف بھی موجود تھے۔اس موقع پر وزیراعظم نے علی بابا گروپ کی کامیابیوں اور کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ ’’ مجھے جیک ما سے جنوری میں عالمی اقتصادی فورم کے موقع پر ملاقات کرکے بڑی خوشی ہوئی تھی اور اس کا ثمر اس مفاہمت کی یادداشت کی صورت میں سامنے آیا ہے جس پر آج دستخط کیے گئے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ’’علی بابا گروپ کی کاروباری ترقی سے نہ صرف روزگار کے مواقع بڑھے ہیں بلکہ اس کا ایک مضبوط انسانی پہلو بھی ہے۔ان اقدار کو میری حکومت کی پالیسیوں میں بنیادی قدر کی اہمیت حاصل ہے‘‘۔

ان کا کہنا تھا کہ ’’ ای کامرس معیشت کے تمام شعبوں میں اقتصادی سرگرمی ،جدت اور کاروبار کو مہمیز دینے کے لیے ایک طاقت ور آلہ ہے۔جب جیک ما نے مجھ سے پاکستان میں ای پلیٹ فارم کے قیام میں دلچسپی کا اظہار کیا تو میں نے اپنے دفتر کو علی بابا کو مختصر ترین وقت ہر ممکن سہولت مہیا کرنے کی ہدایت کی اور صرف چار ماہ میں مفاہمت کی یادداشت پر اتفاق رائے طے پایا گیا اور اس پراب دست خط ہو گئے ہیں۔

اس سمجھوتے کے تحت علی بابا ،آنٹ فنانشیل اور ٹی ڈی اے پی نے دنیا بھر میں پاکستان کی درمیانے اور چھوٹے درجے کی مصنوعات کو ای کامرس کے ذریعے فروغ دینے سے اتفاق کیا ہے۔ اس کے تحت علی بابا کی جانب سے چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری افراد کے لیے آن لائن اور آف لائن تربیتی پروگراموں کا بھی اہتمام کرے گا۔ٹی ڈی اے پی ان کے لیے شرکاء کا انتخاب کرے گا۔

مزید برآں علی بابا گروپ ،آنٹ فنانشیل اور ٹی ڈی اے پی نے پاکستان میں موبائل اور آن لائن ادائی کے شعبوں میں مالیاتی خدمات کو فروغ دینے سے بھی اتفاق کیا ہے۔