.

احتساب عدالت میں نواز شریف پر تین ریفرنسز میں باضابطہ فردِ جرم عائد

سابق وزیر اعظم کا صحت جرم ماننے سے انکار، مجھے فیئر ٹرائل نہیں دیا جا رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستانی دارلحکومت اسلام آباد کی ایک احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف دائر تین ریفرنسز میں باضابطہ فردِ جرم عائد کرتے ہوئے سماعت 15 نومبر تک ملتوی کر دی ہے۔

اس سے پہلے عدالت نے سابق وزیراعظم کی غیر موجودگی میں ان کے نمائندے کے سامنے تینوں ریفرنسز میں ان پر فرد جرم عائد کی تھی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق بدھ کو سماعت کے دوران عدالت میں سابق وزیر اعظم کے خلاف چارج شیٹ پڑھ کر سنائی گئی اور اس پر ان کے دستحظ لیے گئے۔

سابق وزیر اعظم نے صحت جرم سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ ان کے خلاف جو مقدمات قائم کیے گئے ہیں وہ سیاسی ہیں اور انھیں شفاف ٹرائل کا موقع نہیں دیا جا رہا ہے۔

سماعت کے دوران نواز شریف نے عدالت سے مقدمات میں اپنی حاضری سے متعلق استثنیٰ کے بارے میں پوچھا کہ آیا ان کا کوئی نمائندہ آئندہ سماعت پر ان کی جگہ عدالت میں پیش ہو سکتا ہے تو اس پر عدالت نے ان سے تحریری درخواست دینے کا کہا ہے۔ اس کے بعد سابق وزیراعظم کی جانب سے عدالت میں حاضری سے استثنیٰ سے متعلق درخواست دائر کر دی گئی۔

نواز شریف کی میڈیا سے گفتگو

اسلام آباد احتساب عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہا کہ کل سپریم کورٹ کے تفصیلی فیصلے میں ججز ججوں کا غصہ اور بغض ان کے الفاظ میں ڈھل کر سامنے آ گیا۔ یہ سارا بغض، غصہ اور الفاظ تاریخ کا سیاہ باب بنیں گے۔

پچھلے 70 سال میں جب بھی آمر آئے ہماری عدلیہ نے کئی سیاہ باب لکھے ہیں۔ آج کا فیصلہ بھی تاریخ میں سیاہ حروف سے لکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پتہ تھا میرے حق میں فیصلہ نہیں آئے گا۔

انھوں نے کہا کہ ریفرنسز بد نیتی پر مبنی ہیں، سیاسی انتقام پر بنائے گئے۔ تمام الزامات بے بنیاد ہیں۔ مجھے فیئر ٹرائل کے حق سے محروم کر دیا گیا ہے۔

اس سے پہلے بدھ کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نیب ریفرنسز کی سماعت میں ریفرنسز کو اکٹھا کرنے کی درخواست مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ فیصلے کے تفصیل بعد میں جاری کی جائے گئی۔ سابق وزیر اعظم نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر احتساب عدالت میں موجود تھے۔

احتساب عدالت کے باہر لیگی کارکنوں کی بڑی تعداد نے قیادت کے حق میں نعرے بازی کی۔ اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے۔