.

وزیراعظم آزادجموں وکشمیر راجا فاروق حیدر کے ہیلی کاپٹر پر بھارتی فوج کی فائرنگ

ایل او سی کے نزدیک واقعے کے بعد پائلٹ نے بہ حفاظت ہیلی کاپٹر کو حویلی میں اتار لیا ،وزیر اعظم اور عملہ محفوظ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے زیر انتظام ریاست آزاد جموں وکشمیر کے وزیر اعظم راجا فاروق حیدر خان کے ہیلی کاپٹر پر بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول (ایل او سی ) کے نزدیک دوران ِ پرواز فائرنگ کردی ہے۔راجا فاروق حیدر اور ان کا عملہ اس حملے میں محفوظ رہے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق اتوار کی دوپہر پون بجے کے قریب یہ واقعہ آزاد کشمیر میں واقع گاؤں تروڑی کے نزدیک پیش آیا ہے۔راجا فاروق حیدر اپنے سفید رنگ کے سرکاری ہیلی کاپٹر پر سوار کہیں جارہے تھے ۔ حد متارکہ جنگ کے دوسری جانب تعینات بھارتی فوجیوں نے ا چانک وزیر اعظم آزاد کشمیر کے ہیلی کاپٹر کو پاکستان آرمی کا ہیلی کاپٹر سمجھ کر فائرنگ کردی ۔تاہم پائلٹ نے کمال مشاقی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہیلی کاپٹر کو حویلی میں بہ حفاظت اتار لیا۔

واضح رہے کہ کسی بھی فوجی ہیلی کاپٹر کے ایل او سی کے قریب پرواز کا ایک طے شدہ طریق کار ہے۔اس کے تحت دونوں اطراف کی افواج پہلے ایک دوسرے کو اطلاع دیتی ہیں تاکہ کسی بھی قسم کے ناخوشگوار حادثے سے بچا جا سکے۔ تاہم بھارتی فوجیوں نے بوکھلاہٹ کا شکار ہو کر وزیر اعظم آزاد جموں و کشمیر کے ہیلی کاپٹر کو فائرنگ کا نشانہ بنایا ہے۔

دوسری جانب بھارتی میڈیا نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ ایک پاکستانی ہیلی کاپٹر نے لائن آف کنٹرول پر پونچھ سیکٹر میں بھارت کے زیرِ انتظام مقبوضہ جموں و کشمیر کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی تھی ۔بھارت کی ایک خبر رساں ایجنسی ای این آئی کی جانب سے جاری کردہ 30 سیکنڈ ز کی ویڈیو میں ایک ہیلی کاپٹر کو اڑتے دیکھا جا سکتا ہے اور اس پر ہلکے ہتھیاروں سے فائرنگ کی جا رہی ہے۔بھارت کے مقامی وقت کے مطابق یہ واقعہ 12 بج کر 13 منٹ پر پیش آیا تھا۔