پاکستان کا سعودی عرب میں امن و سلامتی اورالحرمین الشریفین کے تقدس وتحفظ کے عزم کا اعادہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
5 منٹس read

پاکستان نے سعودی عرب میں امن و سلامتی اور الحرمین الشریفین کے تقدس وتحفظ کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے سعودی شوری ٰکونسل کے چیئرمین ڈاکٹر عبد اللہ محمد ابراہیم آل الشیخ کی قیادت میں وفد سے جمعرات کے روزاسلام آباد میں ملاقات میں اس عزم کا اظہار کیا ہے۔

وزیراعظم نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ سلمان بن عبد العزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔انھوں نے ایک دوسرے کے قانون سازی کے عمل کو سمجھنے کے لیے دونوں ملکوں کے درمیان پارلیمانی وفود کے تبادلوں کی اہمیت اجاگر کی۔انھوں نے پاک سعودی تعلقات میں حالیہ پیش رفت خاص طور پر سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے فروری میں اسلام آباد کے تاریخی دورے پراطمینان کا اظہار کیا ۔

انھوں نے امید ظاہر کی کہ سعودی ولی عہد کے دورے کے موقع پر کیے گئے وعدے کے مطابق سعودی عرب میں قیدپاکستانیوں کو جلد رہا کردیا جائے گا۔

سعودی شوریٰ کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر عبداللہ محمد ابراہیم آل الشیخ کی سربراہی میں وفد نے پارلیمنٹ ہاؤس میں قومی اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر سے بھی ملاقات کی۔اسپیکر نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پا کستان اورسعودی عرب میں مشترکہ مذہب،اخوت،تاریخ اور ثقافت کی مضبوط اساس پر دیرینہ برادرانہ تعلقات استوار ہیں اور دونوں ہر مشکل گھڑی میں ایک دوسر ے کے شانہ بشانہ کھڑے رہے ہیں۔

اسپیکر نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان پارلیمانی وفود کے تبادلوں سے انھیں ایک دوسرے کے تجربات سے مستفید ہونے اور ایک دوسر ے کے قریب آنے مواقع ملیں گے۔انھوں نے کہا کہ پاکستان کی پارلیمان دونوں ممالک کے مابین تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کے لیے پر عزم ہے اور قومی اسمبلی میں دونوں ممالک کی پارلیمانوں کے مابین روابط کو فروغ دینے کے لیے پاک،سعودی عرب فرینڈزشپ گروپ تشکیل دیا گیا ہے۔

سعودی شوریٰ کونسل کا وفد چیئرمین ڈاکٹر عبداللہ محمد ابراہیم الشیخ کی قیادت میں اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے ملاقات کررہا ہے۔
سعودی شوریٰ کونسل کا وفد چیئرمین ڈاکٹر عبداللہ محمد ابراہیم الشیخ کی قیادت میں اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے ملاقات کررہا ہے۔

انھوں نے خطے میں امن اور خوش حالی کے لیے دونوں ممالک کے ایک دوسر ے کے ساتھ قریبی تعاون کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ اُمت مسلمہ کودرپیش مسائل کے حل کے لیے مسلم ممالک میں اتحاد و یک جہتی وقت کا اہم تقاضا ہے۔انھوں نے اتحاد بین المسلمین کے فروغ اور امہ کو درپیش مسائل کے حل میں سعودی عرب کے کردار کو سر اہا۔

ڈاکٹر عبداللہ محمد ابراہیم آل الشیخ نے ان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سعودی عرب کا مخلص دوست ہے۔وہ اس کے ساتھ اپنے برادرانہ تعلقات کو بڑی اہمیت دیتا ہے اور پارلیمانی اور اقتصادی روابط کو فروغ دے کر انھیں مزید وسعت دینے کا خواہاں ہے۔انھوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان پارلیمان کے ارکان اور حکومتی سطح پر رابطوں میں اضافے سے ہم آہنگی کو فروغ حاصل ہوگا۔

انھوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ امتِ مسلمہ کو درپیش مسائل کے حل کے لیے سعودی عرب اپنا کلیدی کردار ادا کرتا رہے گا۔انھوں نے اسپیکر کو مختلف شعبوں میں اپنی حکومت کی طرف سے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی اور دوطرفہ تجارتی اور پارلیمانی روابط کو فروغ دینے کے لیے ان کی تجویز سے اتفاق کیا۔

سعودی شوری ٰکے چیئر مین نے اسپیکر اسد قیصر کو مملکت کے دورے کی دعوت بھی دی۔ ملاقات میں پاکستان میں تعینات سعودی نواف سعیدالمالکی ، ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری،پاک، سعودی فرینڈ شپ گروپ کے کنوینرمحمد ابراہیم خان، وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان اور پارلیمانی سیکرٹری برائے خارجہ امور عندلیب عباس بھی موجود تھیں۔اس موقع پر اسپیکر اسد قیصر نے ڈاکٹر عبداللہ محمد ابراہیم آل الشیخ کو ایک یادگاری شیلڈ بھی پیش کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں