.

ابوظبی کے ولی عہد کا’’دوستی کے رشتے‘‘کو مزید مضبوط بنانے کے لیے دورۂ پاکستان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید آل نہیان پاکستان کے ایک روزہ دورے پر جمعرات کو اسلام آباد پہنچ رہے ہیں۔متحدہ عرب امارات کے سفیر کے بہ قول ان کے اس دورے کا مقصد دونوں ملکوں کے درمیان دوستی کے رشتے کو مزید مضبوط بنانا ہے۔

انھوں نے اسلام آباد میں بدھ کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ولی عہد شیخ محمد وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کریں گے اور ان سے دوطرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے کے طریقوں کے علاوہ باہمی مفاد کے علاقائی اور عالمی امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔

شیخ محمد بن زاید کے اس دورے سے صرف ایک ہفتہ قبل ہی امارات کے وزیر برائے رواداری شیخ نہیان بن مبارک آل نہیان اسلام آباد آئے تھے۔انھوں نے وزیراعظم عمران خان اور صدر عارف علوی سے الگ الگ ملاقات میں دوطرفہ تعلقات بڑھانے کے امکانات پر بات چیت کی تھی۔

گذشتہ ہفتے سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان آل سعود نے اسلام آباد کا دورہ کیا تھا۔انھوں نے صدر اور وزیراعظم سے ملاقات میں مقبوضہ کشمیر کے بارے میں پاکستان کے مؤقف کی حمایت کا اعادہ کیا تھا اور انھیں سعودی عرب کی مسئلہ کشمیر پر اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے وزرائے خارجہ کا اجلاس بلانے کے بارے میں تجویز سے آگاہ کیا تھا۔

وزیراعظم عمران خان نے 14دسمبر کو سعودی عرب کا دورہ کیا تھا اور سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تعلقات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا تھا۔اسی روز آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ابوظبی کا دورہ کیا تھا اور ولی عہد شیخ محمد بن زاید سے ملاقات میں علاقائی سلامتی کے ماحول اور باہمی دلچسپی کے امور پر بات چیت کی تھی۔

یو اے ای کے ولی عہد نے قبل ازیں 6 جنوری 2019ء کو پاکستان کا دورہ کیا تھا اور تب ان کی آمد سے چند روز پہلے متحدہ عرب امارات نے پاکستان کے لیے تین ارب ڈالر کی امداد کا اعلان کیا تھا۔