نیب کے سابق ڈائریکٹرجنرل مصدق عباسی وزیراعظم کے مشیر برائے احتساب اورداخلہ مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

قومی احتساب بیورو(نیب) کے سابق ڈائریکٹرجنرل بریگیڈیئر(ریٹائرڈ) مصدق عباسی کو وزیراعظم عمران خان کامشیربرائے احتساب اور داخلہ مقرر کیا گیا ہے۔ان کے پیش رو وزیراعظم کے مشیرِاحتساب شہزاد اکبر دوروزپہلے اچانک اپنے عہدے سے مستعفی ہوگئے تھے۔

کابینہ ڈویژن کی طرف سے بدھ کو جاری کردہ ایک نوٹی فکیشن کے مطابق:آئین کے آرٹیکل 93 کی شق (1) کے تحت حاصل اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے صدرعارف علوی نے وزیراعظم کے مشورے پر بریگیڈیئر(ریٹائرڈ) مصدق عباسی کو فوری طورپر احتساب اور داخلہ کا مشیر مقرر کیا ہے۔

ان کا تقرربیرسٹرشہزاد اکبر کے پیر کو مستعفی ہونے کے اعلان کے بعد کیا گیا ہے۔البتہ مستعفی مشیر نے کہا ہے کہ حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) سے بدستور وابستہ رہیں گے۔

انھوں نے ایک بیان میں کہا کہ مجھے پوری امید ہے،پی ٹی آئی کے منشور کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں احتساب کاعمل جاری رہے گا۔میں پارٹی سے وابستہ رہوں گا اور قانونی برادری کے رکن کی حیثیت سے اپنا کردار ادا کرتارہوں گا۔

تاہم بعض میڈیا ذرائع کے مطابق شہزاداکبروزیراعظم عمران خان کااعتماد کھوچکے تھے اور وہ ان کی نظر میں سابق وزیراعظم نوازشریف اور ان کے خاندان کی دیگر شخصیات کے خلاف بدعنوانی کے مقدمات کو ان کے منطقی انجام تک پہنچانے میں ناکام رہے تھے۔

بیرسٹرشہزاداکبر نے وزیراعظم عمران خان کو یقین دلایا تھا کہ وہ ان کی حکومت کی مدت کے پہلے تین سال میں منی لانڈرنگ کے ذریعے بیرون ملک منتقل کی گئی قومی دولت واپس لائیں گے لیکن وہ اس مشن میں ناکام رہے ہیں اور انھیں اب حزب اقتدار اور حزب اختلاف دونوں کی جانب سے تنقید کا سامنا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں