سعودی وزیر دفاع اور امارات کے نائب صدر کے لئے پاکستان کے اعلیٰ سول اعزازات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

صدرِ پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے پیر کو سعودی وزیرِ دفاع شہزادہ خالد بن سلمان بن عبدالعزیز السعود اور متحدہ عرب امارات کے نائب صدر شیخ منصور بن زید النہیان کو جنوبی ایشیائی ملک کے 77 ویں یومِ آزادی کے موقع پر ملک کے سب سے باوقار سول اعزازات سے نوازا۔

پاکستان کے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے ساتھ مشترکہ اقدار، عقیدے، ثقافتوں، دفاعی اور فوجی تعلقات کی بنیاد پر گہرے مراسم ہیں۔ جون میں دونوں خلیجی ممالک نے پاکستان کو 3 بلین ڈالر کے انتہائی ضروری فنڈز فراہم کر کے خودمختار دیوالیہ سے بچنے میں مدد کی۔ یہ فنڈز بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کو جنوبی ایشیائی ملک کے لیے بیل آؤٹ پروگرام کی منظوری کے لیے راضی کرنے میں اہم تھے۔

صدرِ پاکستان کی سرکاری ویب سائٹ کے مطابق غیر ملکی شہریوں کو سویلین اعزازات دینے کا مقصد ان لوگوں کو تسلیم کرنا ہے جنہوں نے پاکستان کے قومی مفاد کے لیے "قابلِ قدر شراکت" کی ہے۔

ریاستی ریڈیو پاکستان کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ پاکستان کے 77ویں یومِ آزادی کے موقع پر صدرِ مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے 696 پاکستانیوں کے ساتھ ساتھ غیر ملکی شہریوں کو اپنے اپنے شعبوں میں بہترین کارکردگی اور جرأت کا مظاہرہ کرنے پر پاکستان سول ایوارڈز سے نوازا ہے۔

حکومت کے کابینہ ڈویژن کی طرف سے جاری کردہ فہرست کے مطابق علوی نے شہزادہ خالد بن سلمان کو ’’ہلالِ پاکستان‘‘ ایوارڈ سے نوازا۔ پاکستانی صدر نے شیخ منصور بن زید النیہان کو ہلالِ قائداعظم سے نوازا۔ فہرست میں مذکور دونوں شخصیات کو اُن کی "پاکستان کے لیے خدمات" کے صلے میں اعزاز سے نوازا گیا۔

ان ایوارڈز کو عطا کرنے کی تقریب 23 مارچ 2024 کو یومِ پاکستان کے موقع پر ہونا قرار پائی ہے۔

دریں اثناء پاکستانی صدر نے 31 جولائی کو چین کے نائب وزیرِاعظم ہی لائفنگ کو پاک چین دوستی کو فروغ دینے کی کوششوں کے اعتراف میں 'ہلالِ پاکستان' ایوارڈ سے نوازا۔ یہ ایوارڈ عطا کرنے کی تقریب اُس وقت منعقد ہوئی تھی جب چین کے نائب وزیرِاعظم پاک-چین اقتصادی راہداری (سی پیک) منصوبے کے 10 سال مکمل ہونے پر تین روزہ دورے پر پاکستان پہنچے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں