نیب کا نواز شریف اور اہل خانہ کے خلاف شریف ٹرسٹ کیس کی تفتیش ختم کرنے کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

پاکستان کے قومی احتساب بیورو [نیب] نے سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کے اہل خانہ کے خلاف شریف ٹرسٹ کیس سمیت پانچ مقدمات کی انکوائری ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

نیب پاکستان نے یکم جنوری کو ہونے والے ایگزیکیٹو بورڈ کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ شریف ٹرسٹ کیس کو نیب کے ترمیم شدہ ایکٹ 2022ء کی سیکشن 31 بی کے تحت تحقیقات ختم کر دی ہے۔

شریف ٹرسٹ کیس میں انوسٹی گیشن کی منظوری مارچ سنہ 2000ء کو دی گئی تھی۔ شکایت میں الزام عائد کیا گیا تھا کہ شریف فیملی نے خفیہ طور پر شریف ٹرسٹ میں کروڑوں روپے وصول کیے ہیں۔

نیب انویسٹی گیشن میں اس الزام پر بھی تحقیق ہوئی کہ ٹرسٹ کے اکائونٹس کا آڈٹ نہیں ہوا اور رقوم میں مبینہ طور پر خرد برد کی گئی ہے۔

تحقیقات میں یہ الزام بھی شامل تھا کہ ٹرسٹ کے نام پر شریف خاندان نے بے نامی جائیداد بنا رکھی ہے۔

نیب نے اجلاس میں شریف ٹرسٹ کیس کے علاوہ پانچ دیگر تحقیقات بھی روکنے کا اعلان کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں