وزیراعظم محمد شہباز شریف علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئر پورٹ سے سعودی عرب روانہ

وزیراعظم اپنے وفد کے ہمراہ کمرشل پرواز کے ذریعے سعودی عرب روانہ ہوئے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے وزیراعظم شہباز شریف ہفتے کو اپنے پہلے غیر ملکی دورے پر علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئر پورٹ سے سعودی عرب روانہ ہو گئے، جہاں ان کی سعودی ولی عہد محمد بن سلمان سے ملاقات متوقع ہے۔

چار مارچ کو پاکستان کے 24 ویں وزیر اعظم بننے کے بعد یہ ان کا پہلا غیر ملکی دورہ ہے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز شریف بھی وزیر اعظم کے ہمراہ ہیں۔ وزیر اعظم آج رات مدینہ منورہ میں قیام کریں گے۔

وفاقی کابینہ کے اراکین اسحاق ڈار، خواجہ آصف، محمد اورنگزیب، عبد العلیم خان، عطاء اللہ تارڑ اور احد خان چیمہ وزیر اعظم کے ہمراہ ہیں۔ وزیر اعظم اپنے وفد کے ہمراہ کمرشل پرواز کے ذریعے سعودی عرب روانہ ہوئے ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات عطا تارڑ نے جمعے کو بتایا تھا کہ وزیر اعظم اور وفد کے ارکان کمرشل پرواز سے سعودی عرب جائیں گے اور سفری اخراجات اپنی جیب سے ادا کریں گے۔

وزیراعظم چھ سے آٹھ اپریل تک سعودی عرب میں رہیں گے اور اس دوران وہ عمرہ بھی ادا کریں گے۔

سعودی عرب 27 لاکھ سے زیادہ پاکستانی تارکین وطن کا گھر ہے جہاں سے پاکستان میں سب سے زیادہ ترسیلاتِ زر آتی ہیں۔

جمعے کو دفتر خارجہ نے وزیراعظم کے دورے کا اعلان کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا تھا کہ وزیراعظم شہباز شریف کی سعودی عرب کے ولی عہد اور وزیراعظم محمد بن سلمان بن عبدالعزیز سے ملاقات متوقع ہے جس میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔‘

دفتر خارجہ نے کہا کہ ’دونوں ممالک کی قیادت برادرانہ تعلقات کو آگے بڑھانے اور باہمی طور پر فائدہ مند اقتصادی اور سرمایہ کاری تعلقات کے لیے پرعزم ہے۔‘

سعودی حکومت نے ابھی تک اس دورے یا اس کے ایجنڈے پر کوئی تبصرہ نہیں کیا۔

شہباز شریف نے آخری بار اکتوبر 2022 میں بطور وزیراعظم اپنی پہلی مدت کے دوران سعودی عرب کا سفر کیا تھا۔ اس دورے میں انہوں نے ولی عہد سے ملاقات کی اور سعودی فیوچر انویسٹمنٹ انیشیٹو سمٹ میں بھی شرکت کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں