نیویارک میں برطانوی شہزادہ ہیری اوران کی اہلیہ میگھن کاخوف ناک ’کارتعاقب‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی شہزادے ہیری، ان کی اہلیہ میگھن میرکل اور ان کی والدہ کی کارکا خوف ناک طریقے سے تعاقب کیا گیا ہے۔اس واقعہ میں پاپارازی فوٹوگرافر ملوث بتائے گئے ہیں جو دوگھنٹے تک شہزادہ ہیری کی کارکا پیچھا کرتے رہے تھے۔

یہ واقعہ نیویارک میں پیش آیا ہے جہاں اس جوڑے نے مس فاؤنڈیشن برائے خواتین کے زیراہتمام منعقدہ اعزازات تقسیم کرنے کی تقریب میں شرکت کی تھی۔اس میں میگھن کو ان کے کام پراعزاز سے نوازا گیا تھا۔

سوشل میڈیا کے ذریعے سامنے آنے والی تصاویر میں ہیری، میگھن اور ان کی والدہ ڈوریا راگلینڈ کو ایک ٹیکسی میں بیٹھے دکھایا گیا ہے۔

شہزادہ ہیری کے ترجمان نے بدھ کو ایک بیان میں کہا کہ گذشتہ رات ڈیوک اینڈ ڈچز آف سسیکس اورمس راگ لینڈ کی گاڑی کاانتہائی جارحانہ انداز میں پاپارازیوں نے تعاقب کیا تھا۔

پاپارازی فوٹوگرافروں نے ان کی گاڑی کا مسلسل دو گھنٹے تک تعاقب جاری رکھا تھا۔اس کے دوران میں سڑک پر سفرکرنے والے دیگرڈرائیوروں، پیدل چلنے والوں اور نیویارک کے محکمہ پولیس (نیویارک پولیس ڈپارٹمنٹ) کے دو افسروں کی گاڑیوں کے درمیان متعدد مرتبہ تصادم ہوتے ہوتے بچا تھا۔

شہزادہ ہیری اور میگھن 2020 میں اپنے شاہی کردار سے دستبردار ہوگئے تھے اورمیڈیا کی جانب سے ہراساں کیے جانے کی وجہ سے امریکا منتقل ہو گئے تھے۔

شہزادہ ہیری طویل عرصے سے پریس کی اپنے ذاتی امورمیں مداخلت کے بارے میں غم وغصے کااظہارکررہے ہیں۔وہ اپنی والدہ شہزادی ڈیانا کی موت کا ذمہ دار بھی پریس ہی کوقرار دیتے ہیں۔پیرس میں پاپارازی فوٹوگرافروں نےان کی لیموزین کارکا پیچھا کیا تھااور اس دوران میں وہ ایک پل پرسے گرکرتباہ ہو گئی تھی۔اس حادثے میں شہزادی ڈیانا اوران کے ارب پتی دوست ڈوڈی الفاید کی موت واقع ہوگئی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں