حج سیزن

بزرگ خاتون حاجی کو طبی خدمات فراہم کرنے والی خواتین رضا کاروں کی کہانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حج کے موقعے پر خواتین رضا کار مردوں کے شانہ بہ شانہ حجاج کرام کی خدمت میں پیش پیش ہوتی ہیں۔

خواتین رضا کاروں کی طرف سے حج کے موقعے پر ایک بزرگ خاتون کو طبی سروس فراہم کرنے کا ایک واقعہ سامنے آیا ہے۔ حج کے دوران اس خاتون کی طبیعت بگڑ گئی تھی جس کے بعد سے فوری طبی امداد فراہم کر کے اس کی جان بچالی گئی۔ خواتین کارکنوں نے بزرگ خاتون کی جان بچانے کے لیے سر توڑ کوشش کی اور فوری طبی امداد سے نہ صرف اس کی طبیعت سنھبل گئی بلکہ اس نے جمرات میں کنکر زنی بھی کی۔

تفصیلات کے مطابق خاتون کی صحت اس وقت خراب ہوئی جب وہ منیٰ میں رمی جمرات کے لیے جا رہی تھی۔ خواتین رضاکاروں نے نہ صرف ضرورت مندوں کو ابتدائی طبی امداد فراہم کی بلکہ انہیں کنکریاں مارنے میں بھی مدد فراہم کی گئی۔

خواتین رضاکاروں کی جانب سے بزرگ خاتون کی طبی امداد "العربیہ ڈاٹ نیٹ" کی کیمرہ ٹیم کے سانے دی گئی۔

حاجی خاتون سعودی رضاکاروں کے ہمراہ
حاجی خاتون سعودی رضاکاروں کے ہمراہ

خیال رہے کہ سعودی ہلال احمر اتھارٹی سے وابستہ 2,300 سے زیادہ خواتین رضاکار نے 1444ھ کے حج سیزن کے کام میں حصہ لے رہی ہیں۔ ان سب کا مشن حجاج کرام کو حج کے موقعے پر مناسک کی ادائی میں آسانی اور سہولت فراہم کرنا ہے۔

رضاکار ٹیمیں مملکت کی زمینی راہ داریوںکے ذریعے بیت اللہ کے زائرین کی آمد کے بعد سے ان کی خدمت کے لیے کام کر رہی ہے، جہاں وہ صحت اور انسانی ہمدردی کے شعبے میں کام کرتی ہیں۔ بندرگاہوں، زمینی راہ داریوں اور ہوائی اڈوں پر بھی رضا کار ٹیمیں حجاج کی رہ نمائی اور مدد کے لیے تعینات ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں