کیا آپ صرف 10 سیکنڈ میں بکری کو تلاش کر سکتے ہیں؟

تیز بصارت والے صرف ایک فیصد افراد مقررہ وقت میں ٹاسک مکمل کرتے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بصری وہم ادراک میں ہیرا پھیری کرتا ہے اور آنکھوں کو اکثر تصاویر کے ذریعے بے وقوف بنایا جاتا ہے۔ نظری وہم چیلنج ذہانت کا پیمانہ نہیں ہے بلکہ تفصیلات کا فوری مشاہدہ کرنے کی صلاحیت کا امتحان ہے۔ ماہرین کا دعویٰ ہے کہ بصری چیلنجز توجہ کے دورانیے کو بڑھا سکتے ہیں۔

ٹائمز آف انڈیا کی طرف سے شائع ایک رپورٹ کے مطابق بصری وہم کا سامنا کرتے ہوئے انسانی دماغ کو متضاد معلومات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ صورت حال اسے تصویر کی اصل نوعیت کو سمجھنے کے لیے ہر عنصر پر توجہ دینے، تجزیہ کرنے اور توجہ دینے پر اکساتی ہے۔

پیش کردہ تصویر بھی بصری وہم کی ایک عمدہ مثال ہے۔ اس تصویر میں پتھروں، پہاڑیوں اور چٹانوں سے بھرے مناظر کے درمیان ایک بکری بھی دکھائی گئی ہے جو چھپی ہوئی ہے۔ خاص طور پر چونکہ بکری کا گہرا بھورا رنگ بغیر کسی رکاوٹ کے پتھروں اور پودوں کے ساتھ مل جاتا ہے۔ اس لیے بکری کو تلاش کرنے کے لیے بہت زیادہ توجہ کی ضرورت ہوتی ہے۔

چیلنج یہ ہے کہ چھپے ہوئی بکری کو 10 سیکنڈ سے بھی کم وقت میں تلاش کرنا ہے۔ بکری دیکھنے کے لیے تصویر کے تمام حصوں کا بغور جائزہ لینے کی ضرورت ہے۔

آپ کے لیے دس سے صفر تک کی الٹی گنتی شروع ہوتی ہے۔ جو لوگ اس مقررہ وقت میں بکری کو تلاش نہ کر سکیں ان کے لیے نیچے دی گئی تصویر میں بکری کی موجودگی والے علاقے کو نشان زدہ بھی کیا گیا ہے۔

سرخ دائرے میں بکری نظر آ رہی  ہے
سرخ دائرے میں بکری نظر آ رہی ہے
مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں