سعودی عرب: آڈیو ویژول کمیشن کے سینما فلموں کی منظوری کے طریق کارکا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

سعودی عرب کے جنرل کمیشن برائے آڈیو ویژول میڈیا (جی سی اے ایم) نے سینما میں دکھائی جانے والی فلموں کی منظوری اور درجہ بندی کے لیے ایک طریق کار متعارف کرایا ہے۔

کمیشن نے اس بات پر زور دیا کہ عمر کی درجہ بندی اور سینما فلموں کی وضاحت کا عمل اس شعبے سے وابستہ ماہرین کی ایک ٹیم کے ذریعے کیا جاتا ہے اور یہ ماہرین فلمی صنعت سے متعلق ہر چیز کا وسیع علم رکھتے ہیں۔

اس عمل میں ہرعمر کے گروپ کے لیے مواد کی احتیاط سے جانچ پرکھ کی جاتی ہے۔مواد کاکئی مراحل میں جائزہ لیا جاتا ہے۔یہ میکانزم کلیئرنس اور درجہ بندی کی درخواست کی وصولی اور جانچ پڑتال کے لیے تاریخوں کے شیڈول سے شروع ہوتا ہے۔اس کے بعد ماہرین کی ٹیم درجہ بندی کے عمل کا آغازکرتی ہے۔

ٹیم عمر کی درجہ بندی اور کسی بھی ترمیم کے ساتھ فلم کے مواد کے بارے میں ایک جامع رپورٹ تیار کرتی ہے اور پھر حتمی کلیئرنس سے پہلے فلم کے تقسیم کار کے ساتھ سفارشات کا اشتراک کرتی ہے۔

سینماگھروں میں دکھائی جانے والی فلموں کے لیے عمر کی درجہ بندی دراصل عمر کے ہرگروپ کے لیے مناسب آڈیو ویژول میڈیا مواد کا تعیّن کرنے کا ایک تشخیصی نظام ہے ، اس کے علاوہ جی سی اے ایم کے منظور کردہ اصولوں اور معیارات کے ساتھ اس کی مطابقت کی جانچ پرکھ کی جاتی ہے۔

اس درجہ بندی کا مقصد کمیونٹی کے لیے فوائد کا ایک پیکج مہیا کرنا ہے۔ان میں سے سب سے اہم بالغوں اور ان کے بچّوں کے لیے الگ الگ مناسب فلم کا انتخاب کرنے میں مدد دینا ہے تاکہ انھیں نقصان دہ مواد کی نمائش سے بچایا جاسکے۔

اس درجہ بندی کا مقصد معاشرتی اقدار،عمومی اصولوں اور معیارات کا احترام کرنے کی اہمیت کی تصدیق بھی ہے۔ یہ معیارات ہی قوانین کے مطابق سعودی عرب میں میڈیا کے مواد کو کنٹرول کرتے ہیں۔

سینما فلمیں دیکھنے والوں کی چھے زمروں میں درجہ بندی کی گئی ہےاور وہ یہ ہیں:

زمرہ جی: تمام عمر کے گروپوں کے لیے موزوں ہے ، کیونکہ ایسی فلم کا مواد ایک مثبت فریم ورک میں آتا ہے۔یہ مواد تشدد اور دھمکیوں سے پاک ہے۔ان میں زیادہ تر کارٹون فلمیں ہیں۔

زمرہ پی جی: اس درجہ بندی میں مواد عام طور پر محفوظ ہے ، لیکن یہ سفارش کی جاتی ہے کہ بالغ افراد 12 سال سے کم عمربچّوں کے ساتھ سینما میں فلموں کو دیکھتے وقت بیٹھیں۔اس مواد سے کچھ بچے پریشان ہوسکتے ہیں کیونکہ ان میں تشدد کے کچھ مناظر، غم یا تخیّل ہوتا ہے۔

زمرہ پی جی 12: اس درجہ بندی میں مواد عام طور پر محفوظ ہے ، لیکن یہ ضروری ہے کہ بالغ افراد 12 سال سے کم عمر افراد کے ساتھ ہوں۔اس زمرے کی فلموں میں ایسے مناظر شامل ہوسکتے ہیں جو ان کے لیے موزوں نہیں ہیں۔ اس زمرے میں آنے والی فلمیں سائنس فکشن، سپر ہیروز یا کامک کتابوں پر مبنی ہوسکتی ہیں۔

زمرہ پی جی 15: اس زمرے میں شامل فلموں کا مواد 15 سال اور اس سے زیادہ عمر کے افراد کے لیے موزوں ہے اور بالغوں کو 15 سال سے کم عمر اور یہاں تک کہ نوجوانوں کے ساتھ جانا ضروری ہے کیونکہ ان میں ایسے مناظر شامل ہوسکتے ہیں جو ان کے لیے موزوں نہیں، جیسے لڑائی، سپر ہیرو کی اداکاری، سائنس فکشن، قدرتی آفات، سادہ رومانس کے ساتھ ساتھ سادہ طریقے سے جنگ وغیرہ۔

زمرہ آر 15: 15 سال سے کم عمر افراد کو اس زمرے کی فلموں کوبالغوں کے لیے مخصوص موضوعات کی وجہ سے دیکھنے سے منع کیا گیا ہے۔ان کے ساتھ قدامت پسندانہ اور مناسب سلوک کیا جاتا ہے۔ ان میں جنگیں، جرائم، گینگ وار، رومانس، خوف اور تشدد شامل ہیں۔

زمرہ آر 18: اس زمرے کے تحت 18 سال سے کم عمر افراد کے لیے زیادہ پختہ موضوعات جیسے شدید تشدد کے مناظر، گھریلو تشدد یا سیاست زدہ فلمیں ممنوع ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں